حکومت کی کامیابی، بیرون ملک پاکستانیوں کےڈیڑھ لاکھ اکاؤنٹس کا پتہ لگالیا گیا

حکومت کی کامیابی، بیرون ملک پاکستانیوں کےڈیڑھ لاکھ اکاؤنٹس کا پتہ لگالیا گیا


اسلام آباد(24نیوز) فیڈرل بورڈ آف ریونیو نے بیرون ملک پاکستانیوں کے ڈیڑھ لاکھ اکاؤنٹس کا پتا لگا لیا، 10لاکھ ڈالر مالیت والےآف شور اکاؤنٹس کا ڈیٹا بھی حاصل کرلیا ہے۔ حکام کے مطابق ایک آف شوراکاؤنٹ سے17 کروڑ ڈالر  کی ریکوری ہوئی۔

 قائمہ کمیٹی خزانہ کااجلاس فیض اللہ کاموکا کی زیر صدارت ہوا۔ ایف بی آر نے کمیٹی کو بتایا کہ پاناما لیکس میں 450 سے زائد افراد کے نام تھےجن میں سے291 افراد کی معلومات ملیں۔ 15 کیسزکیخلاف تحقیقات مکمل ہوئیں جبکہ 6.5 ارب وصول ہوئے،گزشتہ ہفتے ایک اوورسیز پاکستانی سے17 کروڑ روپے ٹیکس ریکور کیا۔

ایف بی آرحکام نے بتایا کہ ایک لاکھ 58 ہزار آف شور اکاونٹس کی تفصیلات مل گئیں،10لاکھ ڈالرزسے زائد کی مالیت کےآف شوربینک اکاونٹس کی تحقیقات کی جارہی ہیں،دبئی میں پاکستانیوں کی556 پراپرٹیز کا انکشاف ہوا، 400 سے زائد افراد ٹیکس ایمنسٹی حاصل کرچکے ہیں،برطانیہ میں پاکستانیوں کی جائیدادوں کی تحقیقات جاری ہیں جبکہ 8 ہزار بے نامی اکاؤنٹس کا پتا بھی لگایا گیا۔

چیئرمین ایف بی آرنےکمیٹی کو بتایاکہ فنانس بل میں ایف بی آرکو ان کیسز کی تحقیقات کا اختیار دیا گیا،بے نامی قوانین ٹیکس وصولی کیلئے نہیں بلکہ منی لانڈرنگ روکنے کیلئے نافذ کیے،چیئرمین ایف بی آر نے کمیٹی کو بتایا کہ ایف بی آر نے علیمہ خان کاکیس نہیں نکالا،سپریم کورٹ نے ازخود نوٹس لیا،کمیٹی نے ایف بی آرکی تحقیقات پرعدم اطمینان کا اظہار کیا اور متعلقہ اداروں کوطلب کرلیا۔

وقار نیازی(Waqar Niazi)

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔