واٹس ایپ صارفین کی ٹارگٹڈ جاسوسی کا انکشاف

واٹس ایپ صارفین کی ٹارگٹڈ جاسوسی کا انکشاف


(24 نیوز) ہیکرزنےکی واٹس ایپ صارفین کی ٹارگٹڈ جاسوسی، واٹس ایپ نےبھی اعتراف کرلیا۔

واٹس ایپ حکام نےالزام عائد کیاکہ اسرائیلی کمپنی نے ایپ کی سیکیورٹی کی بڑی خامی کافائدہ اٹھا کرصارفین کے فونز اوردیگر ڈیوائسز کےپیغامات اوردیگرمعلومات تک رسائی حاصل کی۔ حملہ آوروں نےمخصوص صارفین کی ڈیوائسزپرنگرانی کاسافٹ وئیرانسٹال کرنےکیلئےواٹس ایپ وائس کالنگ فیچرکواستعمال کیالیکن اہم بات یہ ہےکہ کال کےجواب نہ دینےکی صورت میں بھی سافٹ وئیرڈیوائسزپرانسٹال ہوسکتا تھا، اس قسم کی کال کال ہسٹری سے بھی غائب ہوجاتی تھی۔

واٹس ایپ کے مطابق سیکیورٹی ٹیم نے اس خامی کو پکڑا اور معلومات انسانی حقوق کی تنظیموں، منتخب شدہ سیکیورٹی وینڈرزاورامریکی محکمہ انصاف سےشیئرکیں، این ایس او کا سافٹ وئیر "پیگاسز" کسی بھی ڈیوائس سےڈیٹالےسکتاہےجس میں مائیکروفون، کیمرہ کا استعمال اورلوکیشن بھی شامل ہے۔

اسرائیلی کمپنی این ایس او کے مطابق سافٹ وئیرصرف حکومتی ایجنسیاں ہی جرائم اوردہشتگردی کے خلاف استعمال کرنے کا حق رکھتی ہیں، واٹس ایپ کے مطابق یہ حملےطےشدہ اہداف پرکیےگئےلیکن بتانا مشکل ہے کہ کتنے لوگ اس کی زد میں آئے۔