لاہور میں غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیز کے خلاف تحقیقات میں اہم انکشاف


لاہور (24 نیوز): لاہور میں غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیز کے خلاف تحقیقات میں اہم انکشاف، بیشتر غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیز کی پشت پناہی میں حکومتی اور اپوزیشن ارکان اسمبلی ملوث، نیب لاہور نے ان اراکین اسمبلی کی فہرست تیار کرنا شروع کردی۔

 

تفصیلات کے مطابق بیشتر غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیز کی پشت پناہی میں حکومتی اور اپوزیشن ارکان اسمبلی سمیت ایل ڈی اے کے افسران ملوث، نیب لاہور نے اراکین اسمبلی کی فہرست تیار کرنا شروع کردی۔

 

24 نیوز نے شہر میں غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیز کا پردہ چاک کیا تو حکومتی ادارے بھی متحرک ہو گئے، پہلے تو نیب نے ایکشن لیتے ہوئے غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیز کی فہرستیں تیار کیں اور پھر ایل ڈی اے بھی حرکت میں آیا اور آٹھ غیر قانونی ہاسنگ سوسائٹیز کی نشاندہی کر دی جبکہ 24 نیوز اس سے پہلے مجموعی طور پر ایک سو چھاسی غیر قانونی سوسائٹیز کی نشادہی کر چکا ہے۔

 

نیب لاہور کے ڈیٹا کے مطابق متعدد سوسائٹیز گرین بیلٹس پر تعمیر کی گئیں، بیشتر سوسائٹیز ایل ڈی اے کی منظوری اور لے آؤٹ پلان کے بغیر چل رہی ہیں ڈیٹا کی فہرست میں موجود غیر قانونی ہاؤسنگ سوسائٹیز میں شاہین پارک شیخوویلاز، فیصل پارک، جمال گارڈن، حسین ہاؤسنگ کالونی، مدینہ ٹاؤن، رحمانی کالونی، الشافی ٹاؤن، افضل ٹاؤن، گرین ویلی، ال یوسف گارڈن، رحمان گارڈن، اجواء گارڈن، مکہ ٹاؤن، شادمان ٹاؤن، طارق ٹاؤن، احمد ٹاؤن، احمد بلاک مریدکے، البدر ٹاؤن، الواحد ٹاؤن، زمان گارڈن، عرفان بلاک ہجویری ٹاؤن دسنوال روڈ، مرتضیٰ ٹاؤن، صدیقیہ گارڈن، سیٹلائیٹ ٹاؤن، نیو مشتاق پارک، الوہاب گارڈن فیز ٹو، حمزہ کالونی، احمد ڈویلپرز، نورپارک، عرفان گارڈن اور دیگر سوسائٹیز شامل ہیں۔