برطانیہ اور یورپ دیرینہ جھگڑا حل کرنے پر متفق

برطانیہ اور یورپ دیرینہ جھگڑا حل کرنے پر متفق


لندن(24 نیوز) برطانیہ اور یورپی یونین بریگزٹ معاہدے کے مسودے پر متفق ہو گئے،برطانوی وزیراعطم نے کابینہ کا اجلاس آج طلب کرلیا،حکمران جماعت کے چند اراکین نے بریگزٹ ڈیل کے خلاف ووٹ دینے کا اعلان کردیا۔

وزیر خارجہ بورس جانسن کہتے ہیں کہ اب برطانیہ یورپ کی کالونی بن جائے گا ،طویل مذاکرات کے بعد برطانیہ اور یورپی یونین بریگزٹ معاہدے کے مسودے پر تکنیکی سطح پرمتفق ہو گئے ہیں،برطانوی وزیراعظم نے کابینہ کا اجلاس آج طلب کرلیا،حکمران جماعت کے چند اراکین بریگزٹ ڈیل کے خلاف ووٹ دیں گے۔

وزیر خارجہ بورس جانسن کاکہنا ہے کہ معاہدے کے بعد برطانیہ کی حیثیت یورپی یونین کی ایک نوآبادی کی سی رہ جائےگی۔ اس ڈرامے سے کسی کوبے وقوف نہیں بنایا جا سکتا، برطانیہ یورپی کسٹمز یونین کا حصہ رہے گا اور یوں اس پر برسلز کا ریگولیٹری کنٹرول بھی جاری رہے گا۔

عالمی ادارہ تجارت یا ڈبلیو ٹی او میں برطانیہ کے سفیر کاکہنا ہے کہ یہ حقیقت آشکار ہوتی جا رہی ہے کہ برطانیہ یورپی یونین سے بریگزٹ کے باقاعدہ معاہدے کے بغیر نکل سکتا ہے۔