مریض اب  خطرناک زہر سے شفا یاب ہونگے

مریض اب  خطرناک زہر سے شفا یاب ہونگے


سڈنی(24نیوز) مریض اب  خطرناک زہر سے شفا یاب ہونگے،آسٹریلیا کے سائنسدانوں نے نیا طریقہ علاج بتا دیا۔

امریکی میڈیا کے مطابق آسٹریلیا کے بائیو کیمسٹ بتاتے ہیں کہ ایک خطرناک سپائڈر یا مکڑی کا زہر ایسے مریضوں کے لئے زندہ رہنے کے بہتر مواقع پیدا کر سکتا ہے جنہیں سٹروک ہوا ہو۔ ان کیمسٹس نے پتہ چلایا ہے کہ فریزر جزیرے پر فنل ویب نامی سپائڈر ایک ایسا مادہ خارج کرتے ہیں جس میں ایک مؤثر عنصر شامل ہوتا ہے جس کی مدد سے سٹروک کے دماغ پر پڑنے والے اثرات کو روکا جا سکتا ہے۔

سڈنی سے فل مرسر کی رپورٹ کے مطابق فریزر جزیرے کا فنل ویب نامی سپائڈر اتنا زہریلا ہے کہ اس کے کاٹنے سے15منٹ کے اندر موت واقع ہو سکتی ہے۔ لیکن اس کا زہر ایک ایسی دوا کی تیاری میں استعمال ہو سکتا ہے جس سے سٹروک کے باعث ہونے والے دماغی نقصان کو روکا جا سکتا ہے۔

سائنسدان کہتے ہیں کہ اس زہریلے مادے سے دماغ میں ایک ایسے راستے کو بند کیا جا سکتا ہے جو سٹروک کے بعد موت کے امکانات کو بڑی حد تک بڑھا دیتا ہے۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer