معصوم بچی کے قاتل کون؟پولیس پتہ لگانے میں ناکام

معصوم بچی کے قاتل کون؟پولیس پتہ لگانے میں ناکام


کشمور ( 24نیوز ) گڈو کی رہائشی 8سالہ شبانہ کے تین دن گذرنے کے باجود قاتل کا پتہ نہ چل سکا ، والدہ شدت غم سے نڈھال ، پولیس تین دن گذرنے کے باوجود کوئی بھی اہم پیش رفت نہ لاسکی،بچی کے دادا کا کہنا ہے کے پولیس ہمارے پر مقدمہ درج کرانے کے لئے دباو ڈال رہی ہے ہم کسی کے ساتھ بھی زیادتی نہیں چاہتے ہمیں انصاف چاہئے۔

کشمور کے علاقے گڈو کی رہائشی 8سالہ شبانہ شیخ کے قاتل 3دن گذرنے کے باوجود بھی قاتل کا پتہ نہ چل سکا ،تین دن قبل 8 سالہ بچی شبانہ شیخ کا لاش اپنے ہی بند پڑے گھر میں لوہے کے گارڈر سے لٹکا لاش ملا تھا پولیس نے اس دن لاش کو تحویل میں لیکر کشمور سول ہسپتال پوسٹ مارٹم کے لئے منتقل کردیا تھا،جہاں پر بچی کے سیمپلز لئے گئے اور روہڑی میڈیکل کے لئے بھیج دیئے گئے تھے ایم ایس کشمور مشتاق سومرو کے مطابق بچی کے جسم پر کسی بھی قسم کے تشدد کا واضع نشان موجود نہیں اور نا گلا گہونٹنے اور نا پہندا لگنے کے نشان موجود ہیں ایم ایس نے بتایہ کے بچی سے 90% زیادتی کے چانسسز ہیں۔

یہ بھی پڑھیں:     چارسدہ:معمولی جھگڑے نے دو خاندان اجاڑ دئیے، 6 افراد جاں بحق

دوسری جانب تین دن گذر جانے کے باوجود پولیس قاتلوں کا سراغ لگانے میں مکمل ناکام دکھائی دیتی ہے ،ورثاءبھی پولیس کی کارکردگی سے مطمعین نہیں ہیں ،بچی کے دادا کا کہنا ہے کہ پولیس ہمارے پر مقدمہ درج کروانے کے لئے دباو ڈال رہی ہے میں اس وقت تک مقدمہ درج نہیں کراو¿نگا جب تک میڈیکل رپورٹ نہیں مل جاتی ہے ، اور میں کسی کو کیوں ناجائز گرفتار کراو-

بچی کے دادا نے کہا کے ہمارے ساتھ انصاف کیا جائے اور پولیس ہمیں بلا جواز تنگ نہ کرے ہم سے اپنی بات نہ منوائے ہماری بات مانے ہمارے ساتھ زیادتی ہوئی ہے ہمیں انصاف چاہئے دوسری جانب 24 نیوز کی ٹیم نے ایس ایچ او گڈو سے موقف لینے کے لئے رابطہ کیا تو ایس ایچ او گڈو نے موقف دینے سے صاف صاف انکار کردیا ۔