پنجاب میں ماورائے عدالت بندے مارنے والے اہلکاروں کی ترقی روک لیں گے:چیف جسٹس

پنجاب میں ماورائے عدالت بندے مارنے والے اہلکاروں کی ترقی روک لیں گے:چیف جسٹس


اسلام آباد (24نیوز) چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار کا کہنا ہے کہ پنجاب میں ماورائے عدالت بندے مارنے والے پولیس اہلکاروں کو خلاف ضابطہ ترقیاں دی گئیں، عدالتوں کے ذریعے آؤٹ آف ٹرن پرموشن ہی واپس لے لیں گے۔
تفصیلات کے مطابق سپریم کورٹ میں محکمہ پولیس میں خلاف ضابطہ ترقیوں کے کیس کی سماعت ہوئی، چیف جسٹس کی سربراہی میں پانچ رکنی لارجر بینچ نے کیس کی سماعت کی۔ دوران سماعت چیف جسٹس نے ریمارکس دیے کہ سندھ میں ہم نے خلاف ضابطہ ترقیوں پر پابندی لگائی، پنجاب میں کیسے اجازت دے دیں، پنجاب میں ایسے لوگوں نے بھی ترقیاں کیں جنہوں نے ماورائے عدالت قتل کیے۔
انہوں نے کہا کہ بندہ مادیو، خلاف ضابطہ ترقی لے لو، عدالتوں کے ذریعے آ?ٹ آف ٹرن پرموشن ہی واپس لے لیں گے جبکہ کام کرنے والوں کو تمغے اور پیسے دلادیں گے۔ چیف جسٹس نے استفسار کیا کہ خلاف ضابطہ ترقی پانے والوں کو عدالتوں سے کیسے چھوڑ دیں؟ ہم نے انصاف کرنا ہے۔ سپریم کورٹ نے کیس کی مزید سماعت پیر تک ملتوی کردی۔