توانائی کے منصوبے بروقت مکمل نہ ہونے پر نیپرا کا ایکشن


اسلام آباد(24نیوز) وفاقی حکومت کے ملک سے لوڈ شیڈنگ ختم کرنے کے دعووں کی قلعی کھل گئی، توانائی کے منصوبے بروقت مکمل نہ ہونے پر نیپرا کا ایکشن، غفلت اور نااہلی پر این ٹی ڈی سی کو 1 کروڑ جرمانہ کر دیا، نیپرا ذرائع کے مطابق جرمانہ منصوبوں کی تکمیل میں غیر معمولی تاخیر پر کیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق میگا واٹ کا اوچھ-2 پاور پلانٹ کی ٹرانسمیشن لائن مکمل نہ کرنے پر جرمانہ 404 کیا گیا۔220 کے وی کی ٹرانسمیشن لائن نہ بچھانے کی وجہ سے اوچھ ٹو بجلی گھر تاخیر کا شکار ہے۔ نیپرا کے مطابق 220 کے وی کی مانسہرہ، چکدرہ اور ڈی آئی خان کی ٹرانسمیشن لائنز بھی مکمل نہیں کی جا سکیں۔ 2016 میں مکمل ہونے والا نوشہرہ گرڈ اسٹیشن تاحال تعمیر نہ ہو سکا۔ خیبرپختونخوا کے مانسہرہ، ہزارہ، سوات اور ڈی آئی خان میں عوام کو لو وولٹیج اور لوڈشیڈنگ کا سامنا ہے۔500 کے وی کا رحیم یار خان گرڈ اسٹیشن 6 سال سے نامکمل ہے۔

واضح رہے کہ 220 کے وی کا ڈیرہ مراد جمالی گرڈ اسٹیشن 4 سال سے نامکمل ہے۔ 220 کے وی کا غازی روڈ لاہور گرڈ اسٹیشن بھی تاخیر کا شکار ہے۔ این ٹی ڈی سی نیپرا ایکٹ کی خلاف ورزی کرتے ہوئے منصوبے بروقت مکمل کرنے میں ناکام رہی ہے، این ٹی ڈی سی کی نااہلی کی وجہ سے نئے پاور پلانٹس سے بجلی کی بروقت ترسیل نہیں ہو پا رہی۔