اداکارہ نادیہ جمیل سےڈرائیور، فریحہ سےباورچی،ماہین سےمولوی نےجنسی زیادتی کی


کراچی (24 نیوز) اداکاراؤں، ماڈلز اور شوبز کی خواتین نے بھی بچپن میں ہراساں کیے جانے کا انکشاف کیا ہے۔ ان کا کہنا ہے کہ ایسے واقعات سے آنکھیں نہ چرائیں، نہ ہی چھپائیں بلکہ اس کے خلاف آواز اٹھائیں۔

ہالی وُڈ سے ان گنت اور ناقابل فراموش آبیتوں کا سلسلہ شروع ہوا تو پاکستان میں بھی خاص و عام کو گویا زبان مل گئی۔ پاکستانی اداکاراؤں نے بھی اپ بیتیاں سنا دیں۔

نادیہ جمیل ، فریحہ الطاف سمیت کئی خواتین نے ہراساں کیے جانے کے حوالے سے دل میں چھپے راز بتا دیئے۔ان کا یہ کہنا تھا کہ ایسے واقعات سے آنکھیں نہ چرائیں، ایسی چیزوں کو نہ چھپائیں اور ان کے خلاف آواز اٹھائیں۔

نادیہ جمیل نے کہا کہ انہیں بچپن میں زیادتی کا نشانہ بنایا گیا۔ ڈرائیور نے زیادتی کا نشانہ بنایا تو والدین کے ڈر سے خاموش رہی۔

کیٹ واک ایونٹ مینجمنٹ کی چیئرپرسن فریحہ الطاف نے اعتراف کیا کہ وہ بھی جنسی زیادتی کا شکار بنیں۔ نو عمری میں گھر کے باورچی نے ہوس کا نشانہ بنایا۔

فیشن انڈسٹری کی ماہین خان نے الزام مولوی کے سر دھر دیا۔

واضح رہے کہ ہالی وُڈ کے پروڈیوسر ہاروی وائن اسٹین کے خلاف جنسی زیادتی کے الزامات کے بعد می ٹو ہیش ٹیگ کا تانتا بندھ گیا۔