حکومت کو ٹف ٹائم دینے کیلئے اپوزیشن متحد ہوگئی

حکومت کو ٹف ٹائم دینے کیلئے اپوزیشن متحد ہوگئی


اسلام آباد( 24نیوز )اپوزیشن جماعتوں نے جمہوریت کی بقا کیلئے بڑی بیٹھک سجالی۔ بلاول بھٹونےمیثاقِ جمہوریت میں دوسری سیاسی جماعتوں کوشامل کرنے کی پیش کش کردی۔ معاشی امورپرحکومت کوٹف ٹائم دینے کافیصلہ بھی کرلیا۔فوجی عدالتوں کی مدت میں توسیع کے معاملے پرکمیٹی بنادیدی گئی۔

پاکستانی سیاست میں ہلچل کے آثار،بڑی اپوزیشن جماعتوں کے سب بڑے مل بیٹھے۔قومی اسمبلی میں قائدحزب اختلاف شہبازشریف کےچیمبرمیں اپوزیشن جماعتوں کے سربراہان کا اجلاس ہوا جس میں سابق صدر آصف زرداری، چیئرمین پیپلز پارٹی بلاول بھٹو سمیت دیگررہنماؤں نے شرکت کی، اجلاس میں معاشی امورپرحکومت کو پارلیمنٹ میں ٹف ٹائم دینے کا فیصلہ کیا گیاجبکہ فوجی عدالتوں پر بھی متفقہ پالیسی اختیار کرنے پر اتفاق سمیت آئندہ کی حکمت عملی طے کی گئی۔

پیپلزپارٹی کی قیادت نے حکومتی اقدامات پر تشویش کا اظہار کیا،مفاہمت کے بادشاہ نے اپوزیشن جماعتوں کے درمیان مفاہمت کے خوشخبری سنائی اور کہا کہ اپوزیشن میں اتحاد ہوگیا۔ بلاول بھٹو نے میثاق جمہوریت پر نظرثانی کا عندیہ بھی دیدیا۔اپوزیشن اتحاد میں شامل جے یو آئی اور اے این پی کے رہنماوں کا کہنا تھا کہ اپوزیشن نے وہی فیصلے کیے جو عوام ہم سے توقع کررہی ہے۔

حکومت کچھ دینے کی پوزیشن میں نہیں:آصف زرداری

اس سے قبل آصف علی زرداری پارلیمنٹ ہائوس پہنچے تو صحافی نے سوال کیا کہ وزیراعظم کہہ رہے ہیں کہ اپوزیشن این آر او کے لئے واک آئوٹ کر رہی ہے؟جس کے جواب میں انہوں نے کہا اپوزیشن پہلے دن سے واک آئوٹ کر رہی ہے، این آر او کیوں لے گی، این آر او کی تعریف وزیر اعظم کو نہیں آتی اور حکومت کچھ بھی دینے کی پوزیشن میں نہیں ہے، ہمیں این آر او کی ضرورت ہی نہیں۔