شہباز شریف نے پولیس کے ذریعے 870 افرادکو قتل کروادیا: عمران خان

شہباز شریف نے پولیس کے ذریعے 870 افرادکو قتل کروادیا: عمران خان


جھنگ (24 نیوز)   پاکستان تحریک انصاف کے چیئرمین عمران خان کا ن لیگ پر الزام عائد، انہوں نے کہا ہے کہ سابق وزیراعلیٰ پنجاب شہباز شریف نے پولیس کے ذریعے 870 افراد کو قتل کروایا۔ نواز شریف آج اڈیالہ جیل میں بیٹھ کر مظلوم اور معصوم شکل بنا رہا ہے۔

 جھنگ میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے ان کا کہنا تھا کہ شریفوں نے پولیس کو تباہ کردیا ہے۔ ہم نےخیبرپختونخوا کی پولیس کو غیرسیاسی کرکے مثالی بنادیا ہے۔ خیبرپختونخوا کی پولیس میں کوئی پیسے دے کر بھرتی نہیں ہوتا۔ انہوں نے مزید کہا کہ اگر حکومت میں آئے تو پولیس اور بلدیاتی نظام ٹھیک کر دیں گے۔

انکا مزید کہنا تھا کہ کسی ملک میں یہ تصور نہیں کہ وزیراعظم اور وزیراعلیٰ کہیں کہ میں نے آپ کو ہسپتال دے دیا، جمہوریت میں ایسا نہیں ہوتا، ایسا بادشاہت میں ہوتا ہے۔ جمہوریت تو ایک نظام کا نام ہے، لاہور کے بادشاہ کو کیا پتا جھنگ میں کیا مسائل ہیں۔

یہ خبر بھی پڑھیں: جلسے ملتوی کئے تو دہشت گرد کامیاب ہوجائیں گے: عمران خان

عمران خان نے مزید کہا کہ شہباز شریف نے ملتان میں میٹرو بس بنائی جو کہ ملتان کی عوام نے کہا بھی تھا کہ ہمیں نہیں چاہیے اس کے باوجود 60 ارب روپے کی میٹرو چلادی۔ لیکن بسیں خالی چل رہی ہیں، یہ فیصلہ لاہور سے اس لیے کیا گیا کہ شریف خاندان کو اس میں کمیشن ملنا تھا۔

 انہوں نے مزید کہا کہ عوام کا حق ہے کہ انہیں تعلیم، ٹیکنیکل ادارے اور کاروبار کیلئے قرضے ملیں۔ انکا کہنا تھا کہ پنجاب کے ترقیاتی بجٹ کا آدھا پیسا لاہور پر لگا دیا گیا۔ خیبرپختونخوا میں 30 فیصد ترقیاتی فنڈ بلدیاتی اداروں کو دیا جاتا ہے

 پڑھنا مت بھولئے: قائد مسلم لیگ ن محمد نواز شریف کا جیل سے قوم کے نام پیغام

دوسری جانب فیصل آباد میں جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان نے کہا کہ نواز شریف آج اڈیالہ جیل میں بیٹھ کر مظلوم اور معصوم شکل بنا رہا ہے۔ ان کا کہنا تھا کہ 22 سال پہلے کرپشن کے بادشاہ آصف زرداری اور نواز شریف کیخلاف مہم شروع کی، قوم کا پیسہ لوٹ کر یہ لوگ باہر چلے گئے، ان لوگوں نے چوری کرکے ملک کا مستقبل اندھیرے میں ڈال دیا۔

انہوں نے کہا کہ نواز شریف کے بیٹے اربوں روپے کے گھر میں بیٹھے ، مجرم نے قوم کا 300ارب روپیہ اپنے بچوں کی 16کمپنیوں میں ڈالا۔ چئیرمین تحریک انصاف نے کہا کہ ہم ایسا ملک بنائے گئے جہاں خوشحالی ہوگی، اچھے اور برے کی تمیز ختم ہوجائے گی۔ انہوں نے عوام سے پوچھا کہ کیا ڈاکو پکڑا جائے تو اسے ہار ڈالیں گے؟ کندھے پر بٹھائیں گے یا اٹھاکر جیل میں ڈالیں گے؟

اہم خبر  لازمی پڑھیں: نواز شریف اور مریم نواز مزید پابندیوں کی زد میں آگئے

انہوں نے کہا کہ یہ وقت کرپٹ حکمرانوں کو شکست دینے کا وقت ہے۔ ملک 30 سال سے چوروں کے شکنجے میں پھنسا ہوا تھا، 25 جولائی کو اس شکنجے سے نکلنے کا موقع ہے۔  عمران خان نے کہا کہ عابدشیر علی کےوالد نے کہا کہ رانا ثناء نے 18 قتل کرائے۔ انہوں نے کہا کہ 10 سال میں 21 ہزار ارب روپے قرضہ لیا گیا، ملک میں کونسی خوشحالی آئی؟ آج پاکستان کی برآمدات گرگئیں جبکہ بھارت اور بنگلادیش کی برآمدات اوپر جارہی ہیں۔