پاکستانی قرضوں کی واپسی نا ممکن، زرمبادلہ کے ذخائر نچلی ترین سطح پر پہنچ گئے

پاکستانی قرضوں کی واپسی نا ممکن، زرمبادلہ کے ذخائر نچلی ترین سطح پر پہنچ گئے


اسلام آباد(24نیوز) آئی ایم ایف نے خطرے کی گھنٹی بجادی،پاکستانی زرمبادلہ کے ذخائر 2 مہینے کے درآمدی بل پر پہنچ گئے،قرضوں کی واپسی میں مشکلات بڑھنے لگیں۔ آئی ایم ایف نے معاشی صورتحال پر رپورٹ جاری کردی۔

تفصیلات کے مطابق پاکستان کی معاشی صورتحال پر جاری کردہ رپورٹ میں بتایا گیا کہ قرضوں کی واپسی میں مشکلات بڑھ رہی ہیں۔ آئی ایم ایف پروگرام کے تحت حاصل کی گئی اصلاحات رک گئی۔معاشی اصلاحات رکنے سے شرح نمو کا ہدف حاصل کرنا مشکل ہوگا۔

یہ بھی پڑھیں:حکومت نے قرضوں کے سارے ریکارڈ توڑ دیئے 

 رپورٹ کے مطابق پاکستان کے زرمبادلہ کے ذخائر2 مہینے سے زائد کے درآمدی بل پر پہنچ گئے۔بھاری قرضوں کے باوجود زرمبادلہ کے ذخائر کم ہورہے ہیں۔رواں سال پاکستان کی معاشی شرح نمو 5.6 فیصد رہنے کی توقع ہے۔جاری کھاتوں کے خسارے میں تیزی سے اضافہ ہورہا ہے۔ پاکستانی کرنسی کی قدر زیادہ دکھائی گئی۔مانیٹری پالیسی کو نرم رکھا گیا۔