بلوچستان مستونگ کیڈٹ کالج میں طلبا پرتشدد، صوبائی حکومت  نےنوٹس لےلیا


کوئٹہ (24 نیوز) وزیراعلیٰ بلوچستان عبدالقدوس بزنجونے مستونگ کیڈٹ کالج میں طلباءپرتشدد کا نوٹس لے لیا، بلوچستان ہائیکورٹ کےحکم پرپرنسپل کوگرفتارکرلیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق کیڈٹ کالج مستونگ میں پرنسپل جاویداقبال بنگش کی مبینہ ہدایت پرکچھ طلباء نے مل کر دیگرطلباء کو تشدد کا نشانہ بنایا تھا۔ سوشل میڈیا پر ویڈیو وائرل ہونے کے بعد والدین سیاسی جماعتوں اور سول سوسائٹی کی جانب سے شدید احتجاج کیا گیا۔وزیراعلیٰ عبدالقدوس بزنجو اور گورنر بلوچستان محمدخان اچکزئی نے نوٹس لیتے ہوئے پرنسپل کو معطل کردیا۔

یہ بھی پڑھیں:عسکری حکام نے علم کی شمع روشن رکھنے کا بیڑا اٹھالیا
 دوسری طرف ہائیکورٹ کےحکم پر ایف آئی آر درج کرکے جاویداقبال بنگش کوگرفتاربھی کرلیا گیا۔کیس کی سماعت چیف جسٹس بلوچستان ہائیکورٹ محمد نور مسکانزئی اورجسٹس ہاشم کاکڑ کررہے ہیں۔ عدالت نے سیکرٹری کالجز، پی ایس ٹو گورنر اور سی سی پی او کو بھی طلب کرلیا۔ تشدد میں ملوث تمام ملزمان کی گرفتاری کیلئے کاروائی کا آغاز کردیا گیا ہے۔ جن طلباء پرتشدد ہوا ان کا طبی معائنہ بھی کرلیا گیا ہے۔