ن لیگ حکومت کا فاٹا کو خیبر پختونخوا میں ضم کرنے کیلئے 30ویں آئینی ترمیم کا فیصلہ


اسلام آباد (24 نیوز) ن لیگ کی حکومت نے جاتے جاتے بڑا فیصلہ کر لیا۔ حکومت فاٹا کو خیبر پختونخوا میں ضم کرنے پر تیار ہو گئی۔

تفصیلات کے مطابق قومی اسمبلی کی قائمہ کمیٹی برائے قانون و انصاف تیسویں ترمیم کی کل منظوری دے گی۔ منظوری کی صورت میں بل قومی اسمبلی میں پیش کیا جائے گا۔ بل کی منظوری کے لیے حکومت کو اپوزیشن کی حمایت حاصل ہے جبکہ حکومتی اتحادی مولانا فضل الرحمان اور محمود خان اچکزئی تاحال معترض ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: ترک وزیر اعظم کا پاکستانی وزیر اعظم کو ٹیلی فون، او آئی سی اجلاس میں شرکت کی دعوت 

واضح رہے کہ رواں سال کے آغاز میں قومی اسمبلی نے ایک بل منظور کیا تھا جس کے تحت سپریم کورٹ پاکستان اور پشاور ہائیکورٹ کا دائرہ کار فاٹا تک بڑھایا گیا تھا۔ جبکہ اس سے قبل گزشتہ برس ستمبر میں پولیس کا دائرہ اختیار فاٹا تک بڑھانے کی منظور دی گئی تھی۔