قندیل بلوچ قتل کیس الجھانے کی بجائے حل کیا جائے: مفتی عبد القوی

قندیل بلوچ قتل کیس الجھانے کی بجائے حل کیا جائے: مفتی عبد القوی

(24نیوز) قندیل بلوچ قتل کیس میں گزشتہ روز ضمانت پر رہا ہونے والے مفتی عبد القوی نے کہا ہے کہ پولیس کی تفتیش اور چالان مکمل ہونے کے بعد کیس کے تمام حقائق سامنے آ جائیں


تفصیلات کے مطابق گزشتہ رات ضمانت پر رہا ہونے کے بعد اپنے مدرسے میں پریس کانفرنس کرتے ہوئے مفتی عبدالقوی کا کہنا تھا کہ جیل کے 14 دن میرے لیے ایک معلوماتی اور مشاہداتی دورہ تھا۔ انہوں نے کہا کہ پنجاب پولیس سے تفتیش اور چالان جلد مکمل کرنے کی درخواست کرتا ہوں ۔

مفتی عبدالقوی کا مذید کہنا تھا کہ جیل میں رہ کر وہاں کے مسائل کا بغور جائزہ لیا۔ سماجی تنظیموں کو کہتا ہوں کہ پولیس کے ساتھ ملکر جیل کے قیدیوں کی رہائی اور مسائل کے حل کے لیے اپنا کردار ادا کریں۔

مفتی عبدالقوی نے کہا کہ قندیل بلوچ کے گھر والوں کو ایک کروڑ روپئے کی آفر کرنے کا الزام غلط ہے۔ انہوں نے کہا کہ جن علما کرام نے انکی مخالفت کی ہے وہ ختم نبوت قانون میں ترمیم کرنے کی کوشش میں خود بدنام ہو گئے ہیں۔