سندھ کےمیڈیکل کالجزمیں داخلوں کامعاملہ،طلباء انصاف کیلئے عدالت پہچ گئے


کراچی (24نیوز): سندھ کے میڈیکل کالجز میں داخلوں کامعاملہ عدالت پہنچ گیا۔ این ٹی ایس پاس کرنیوالے طلباء نے ٹیسٹ کی منسوخی کے خلاف سندھ ہائیکورٹ کا دروازہ کھٹکھٹا دیا۔ طلبا نے درخواست میں موقف اختیارکیا کہ امتحان پاس کرنیوالوں سے دوبارہ امتحان لینا ٹھیک نہیں۔

سندھ کے میڈیکل کالجزمیں داخلوں کے خواہشمند طلبہ نے این ٹی ایس ٹیسٹ کی منسوخی کے خلاف سندھ ہائیکورٹ میں جمع کردہ درخواست میں موقف اپنایا کہ این ٹی ایس ٹیسٹ پاس کرنےوالے طلبہ کے امتحانات کی منسوخی جائز نہیں جب امتحان پاس کر چکے تو دوبارہ امتحان کیوں دیا جائے، واضح رہے کہ بائیس اکتوبر دوہزار سترہ کو سندھ بھر کے میڈیکل کالجز میں داخلے کے لیے ہونے والے امتحان میں 21 ہزار سے زائد طلبہ نے حصہ لیا تھا۔

 سوشل میڈیا پر پرچہ آوٹ ہونے کے بعد طلباء اور والدین نے مختلف الزامات لگائے اور اس کی شفافیت پر کئی اعترضات اٹھائے تھے، اس کے لئے احتجاج بھی کیئے گئے، جس پر وزیراعلی سندھ نے نوٹس لیتے ہوئے کمیٹی قائم کی 5 رکنی کمیٹی کے فیصلے کی روشنی میں سندھ حکومت نے انٹری ٹیسٹ کے نتائج کی منسوخی کا نوٹیفیکیشن جاری کرکے ایچ ای سی کے تحت داخلہ امتحان لینے کا اعلان کیا۔