لاہور کے نجی ہوسٹل میں طالبہ کی موت کیسے ہوئی؟

لاہور کے نجی ہوسٹل میں طالبہ کی موت کیسے ہوئی؟


لاہور ( 24نیوز ) لاہور کے علاقہ جوہر ٹاؤن سی بلاک کےنجی ہوسٹل سے لڑکی کی لاش برآمد ہوئی تھی، 23سال کی روزینہ میڈیکل کی طالبہ تھی۔

تفصیلات کے مطابق لاہور کے علاقہ جوہر ٹاؤن سی بلاک کےنجی ہوسٹل برآمد ہونے طالبہ کی لاش کا پوسٹ مارٹم مکمل ہو گیا، رپورٹ کے مطابق لڑکی کے جسم پر کو تشدد کے نشانات نہیں نشے کی عادی تھی، بازو پر انجکشن لگانے کے پرانے نشانات موجود ہیں، قبل ازیں  23 سالہ روزینہ کی لاش جوہر ٹاؤن سی بلاک کےنجی ہوسٹل   سے  برآمد ہو ئی تھی وہ یو ایم ٹی میں میڈیکل کی طالبہ تھی ،  اس کی رومیٹ گھر گئی ہوئی تھی جب وہ واپس آئی تو  روزینہ کو کمرے میں مردہ حالت میں پایا جس پر اس نے پولیس کو اطلاع دی ۔

پولیس نے  ہوسٹل مالک اور ساتھی سے ساری  تفتیش کرتے ہوئے ان کے بیان قلمبند کئے ، جس کے بعد لاش کو پوسٹ مارٹم کے لئے مردہ خانے منتقل کر دیا گیااور مقتولہ کے گھر والوں کو اطلاع کر دی گئی، پولیس کا کہنا تھا کہ طالبہ کے جسم پر تشدد کا کوئی نشان  موجود نہیں ،   موت کیسے ہوئی  پوسٹ مارٹم رپورٹ کے بعد ہی اصل وجہ کا پتا چلے گا ۔