منشابم سپریم کورٹ اسلام آبادسےگرفتار



اسلام آباد (24نیوز)لاہورمیں قیمتی اراضی پرغیرقانونی قبضے کرنے میں ملوث منشا بم کوچیف جسٹس کےحکم پرسپریم کورٹ سے گرفتار کرلیا گیا،  ملزم پانچ گھنٹے تک احاطہ عدالت میں رہا ۔ 80 مقدمات میں ملوث ملزم پنجاب پولیس کو کئی روزسے مطلوب تھا۔

پنجاب پولیس کو مطلوب ملزم سپریم کورٹ اسلام آباد سےگرفتار ہوگیا۔  منشا کھوکھرعرف بم پر جوہرٹاون لاہور میں زمینوں پر قبضےکا الزام ہے۔  منشا بم اپنی ہی منشا پر گرفتاری دینے سپریم کورٹ پہنچا اورعملےسےکہا کہ وہ پنجاب پولیس سےچھپ کرعدالت آیا ہے۔  چاہتا ہے کہ چیف جسٹس سےمل کرانہیں تمام حقائق سےآگاہ کروں تا کہ اس کےخلاف انتقامی کارروائی نہ ہو۔  ملزم کو چیف جسٹس کے چیمبر میں پیش کیا گیا جہاں منشا بم نے موقف اختیار کیا کہ اس نے زمینوں پر قبضہ نہیں کیا اسے ساری زمین وراثت میں ملی ہے۔ بیٹے نے پی ٹی آئی کے ٹکٹ پرچیرمین شپ کا الیکشن لڑا جس پرسابق وزیراعلیِ پنجاب نےاس کےخلاف مقدمات بنا ڈالے۔چیف جسٹس نےموقف سننے کےبعد منشا بم کو گرفتار کرنےکا حکم دیا جس پراسلام آباد پولیس نےملزم کوگرفتارکرکےتھانہ سیکریٹریٹ منتقل کردیا۔

سپریم کورٹ اس سےپہلے بھی منشا بم کی گرفتاری کا حکم دے چکی ہے تاہم ملزم ہر بار پولیس کو چکما دے کرنکل جاتا۔ 4اکتوبر کو پولیس نےملزم کےبیٹے فیصل منشا کو ناکے پر روکنے کی کوشش کی لیکن وہ بھی فرار ہو گیا۔  منشا بم پر قتل ،اقدام قتل ، زمینوں پر قبضے اور انسداد دہشت گردی کی دفعات کے تحت 80 مقدمات ہیں ، یہ مقدمات لاہور کے تھانہ جوہر ٹاون اور تھانہ ٹاون شپ سمیت 7 تھانوں میں قائم کئے گئے ہیں ۔ ملزم منشا بم کو مجسٹریٹ کی عدالت میں پیش کرنے کے بعد راہداری ریمانڈ پر لاہور پولیس کے حوالے کیا جائے گا ۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔