صدر نئے،ٹھاٹھ باٹھ پرانی


کراچی( 24نیوز )تبدیلی سرکار تو آگئی لیکن پروٹوکول میں تبدیلی نہ آئی، تحریک انصاف حکومت کے سادگی اورپروٹوکول نہ لینے کے دعوے دھرے کے دھرے رہ گئے۔صدرمملکت بارہ گاڑیوں کے جھرمٹ میں مزارقائد پہنچے۔صدر ڈاکٹر عارف علوی کی آمد کے باعث اطراف کی سڑکیں بند رکھی گئیں جس سے شہریوں کو شدید مشکلات کاسامنا کرنا پڑا۔
اس سے قبل صدر مملکت عارف علوی نے قومی ایئر لائن کے بجائے نجی ایئر لائن سے کراچی کا سفر کیا مگر ایئر پورٹ سے پروٹوکول نہ لینے کا دعویٰ کرنیوالے عارف علوی 42 چمچماتی گاڑیوں کے قافلہ میں روانہ ہوئے، اس دوران شارع فیصل سمیت تمام سڑکیں ٹریفک کیلئے بند کر دی گئی تھیں جو ان کے گزرنے کے بعد کھولی گئیں۔
صدر کا استقبال کرنے کیلئے گورنر اور وزیر اعلیٰ سندھ سمیت صوبے کی دیگر اہم شخصیات بھی اولڈ ٹرمینل پہنچی تھیں۔ صدر عارف علوی اپنی اہلیہ کے ساتھ عام پرواز سے کراچی پہنچے۔ اسلام آباد ایئر پورٹ پر اے ایس ایف کی سکیننگ مشین پر سامان انہوں نے خود سکین کرایا، ایئر پورٹ پر اپنا سامان خود اٹھایا اور کراچی کے لیے بورڈنگ کارڈ بھی قطار میں کھڑے ہوکر وصول کیا۔