انسانیت کی تذلیل کا دلخراش واقعہ،نوجوان کو ’’کتا ‘‘بنادیا


خانیوال(24 نیوز)  بااثر افراد نے کورٹ میرج کرنے والے نوجوان اور اس کے بھائی کو ڈیرے پر لے جا کر ڈنڈوں سے وحشیانہ تشدد کا نشانہ بنایا، کتے کی طرح گھومنے اور بھونکنے پر مجبور کیا، والد اور چچا کو گالیاں دینے پر مجبور کرتے رہے، ویڈیوز بھی بنالی۔

 تفصیلات کے مطابق کبیروالا, تلمبہ کے رہائشی نوجوان ثمر عباس نے کنڈ سرگانہ کی رہائشی لڑکی ارم بی بی سے کورٹ میرج کی، لڑکی کے والدین اور علاقے کے بااثر افراد نے لڑکی کو باقاعدہ رخصت کرنے کی درخواست پر ارم بی بی کو اس کے والدین کے ساتھ بھیج دیا گیا، مگر لڑکی کے ورثہ اور بااثر افراد نے ثمر عباس اور اس کے بھائی کو دھوکے سے کنڈ سرگانہ بلوا لیا۔ دونوں بھائیوں کے آنے پر بااثر افراد دونوں بھائیوں کو اپنے ڈیرے پر لے گئے، جہاں دونوں بھائیوں پر ظلم کے پہاڑ توڑ دئے گئے، ڈنڈوں اور سوٹوں سے وحشیانہ تشدد،کتا بن کر بھونکنے پر مجبور کرتے رہے، والدین کو گالیاں نکالنے پر مجبور بھی کیا، بااثر افراد نے زبردستی اپنی مرضی کا بیان بھی ریکارڈ کروا لیا۔

نوجوانوں پر ہونے والے ظلم کی ویڈیوز بھی بناتے رہے۔ زبان کھولنے کی صورت میں ویڈیو انٹرنیٹ پر وائرل کرنے اور سنگین نتائج کی دھمکیاں دیتے رہے۔ اس دوران ثمر عباس کی بیوی ارم بی بی  کو بھی غائب کر دیا گیا، قتل کئے جانے کا شبہ ، اتنے بڑے ظلم پر پولیس اور سیکورٹی ادارے لا علم، دونوں بھائیوں نے اپنے اوپر ہونے والے ظلم پر وزیر اعلی پنجاب اور چیف جسٹس آف پاکستان سے انصاف کی اپیل کی ہے۔