پشاور: حیات آباد مقابلہ، ہلاک ہونے والے4دہشت گردوں کی شناخت ہوگئی

پشاور: حیات آباد مقابلہ، ہلاک ہونے والے4دہشت گردوں کی شناخت ہوگئی


پشاور (24نیوز) پشاورکےعلاقےحیات آبادمیں میں سیکورٹی فورسز کے ساتھ جھڑپ میں ہلاک ہونے والے5میں سےچار دہشت گردوں کی شناخت ہوگئی، ایک خودکش حملہ آور افغان باشندہ نکلا۔

پشاور کے علاقہ حیات آباد فیز سیون میں مارے گئے5 دہشت گردوں میں سے چار کی شناخت ہوگئی تاہم ایک دہشت گرد کی تاحال شناخت نہ ہوسکی۔سی سی پی پشاور قاضی جمیل کے مطابق مارے جانےوالےدہشتگردوں میں ایک خودکش حملہ آور عمران محمد بھی شامل تھاجس کا تعلق افغانستان سے ہے اوروہ بارود سے بھرے موٹر سائیکل کو خودکش دھماکےکے لئے استعمال کرنا چاہتا تھا۔

پولیس کے مطابق دہشت گردامجد عرف اجمل، فیرز شاہ اور طارق کاتعلق ضلع خیبرسےہےجبکہ امجد عرف اجمل دہشت گردوں کا گروپ لیڈر تھا۔مکان سے کئی دستی بم، کلاشنکوف اور پستول برآمد ہوئے۔

سکیورٹی فورسز نے آپرشن مکمل کرلیا، تمام دہشتگرد ہلاک

  پشاور  کے علاقہ  حیات آباد میں سیکورٹی فورسز   نے تمام دہشتگردوں کو ہلاک کر کے آپریشن مکمل کرلیا، آپریشن کے دوران ایک پولیس اے ایس آئی قمر عالم شہید اور ایک اہلکار زخمی ہوا،  آپریشن پولیس اور آرمی کے جوانون نےمل کر  کیا۔

قبل ازیں پولیس کا کہنا تھا کہ دہشتگردگھر کی بیسمنٹ اور فرسٹ فلور پر موجود تھے، آپریشن کو مکمل کرنے کے لئے سیکیورٹی فورسز نے کے اہلکار ڈرون کیمرے سےمدد حاصل کی۔ ذرائع کا کہنا تھا کہ دہشتگردوں کی موجودگی کال ٹریس سے ہوئی،گھر میں موجود دہشتگردوں نے ساتھی کو کھانے لانے کا کہا جس کے بعد سکیورٹی ادارے متحرک ہوگئے اور ان کے خلاف آپریشن شروع کیا، آپریشن میں گراؤنڈ فلور کلئیر کر دیا گیا، دہشتگرد گھر کی پہلی منزل پر موجود تھے، گھر میں فیملی نہیں تھی، بلڈنگ حجرے کے طور پر استعمال میں تھی۔

سی سی پی او  پشاور  قاضی جمیل نےآپریشن ایریا کا دورہ کیا تھا اور کہا تھا کہ دہشت گردوں کے خلاف اپریشن آخری مرحلے میں داخل ہوگیا ہے،جوانوں نے بہتر حکمت عملی سے عوام کی حفاظت کو یقینی بنایا، اطراف کے ایرایا کو  بھی  کلئیرکیا گیا۔ دہشت گرد جس مکان میں موجود تھے وہاں بالائی منزل میں آپریشن جاری رہا، 3 سے 4 دہشت گرد ابھی بھی مکان میں موجود تھے اور وقفے وقفے سے فائرنگ اور دھماکوں کی آوازیں آرہی تھیں۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔