پولیس کی انوکھی منطق،ملزموں کو گرفتار کرنے کی بجائے حاملہ خاتون , معصوم بچے کو حراست میں لے لیا

پولیس کی انوکھی منطق،ملزموں کو گرفتار کرنے کی بجائے حاملہ خاتون , معصوم بچے کو حراست میں لے لیا


سکھر (24نیوز) پولیس کی انوکھی منطق، قتل کے ملزموں کو گرفتار کرنے کی بجائے حاملہ خاتون کو اوراس کے معصوم بچے کو حراست میں لے لیا، میڈیا سے چھپانے کے لئے اہلکاروں نے خاتون کو وومن سنٹر کے باتھ روم میں بند کردیا۔

تفصیلات کے مطابق سکھر میں پولیس نصرت چاچڑ قتل کے ملزموں کو تو گرفتار نہ کرسکی۔ حاملہ خاتون اور اس کے معصوم بچے کو حراست میں لے کر وومن سنٹر منتقل کردیا۔ 3 روز ویمن سنٹر میں گزارنے کے بعدبچہ بیمار پڑگیا۔ ستم ظریفی یہ کہ میڈیا کی ٹیمیں ویمن سنٹر پہنچیں تو اہلکاروں نے خاتون کو باتھ روم میں چھپا دیا۔ خاتون نے روتے ہوئے بتایا کہ اس کی طبیعت بھی ٹھیک نہیں۔اس کا بچہ بھی شدید بیمار ہے۔

دوسری جانب ایس ایس پی سکھر امجد شیخ کا کہنا تھا کہ خاتون کو حراست میں نہیں لیا گیا بلکہ تحفظ فراہم کیا ہے۔ مقتول پارٹی خاتون کا نام بھی کیس میں درج کرانا چاہتی ہے۔ جس کی انکوائری ہو رہی ہے۔