علی ترین نے لودھراں ضمنی انتخاب میں ناکامی کی اصل وجہ بتا دی


لاہور (24 نیوز) پی ٹی آئی کے رہنما جہانگیر ترین کے صاحبزادے علی ترین نے این اے 154 لودھراں ضمنی انتخاب میں ناکامی کی اصل وجہ بتا دی۔

24 نیوز کے پروگرام ڈی این اے میں سنیئر اینکر پرسن چوہدری غلام رسول اور قاضی سعید سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے علی ترین نے این اے 154 لودھراں ضمنی انتخاب میں ناکامی کی اصل وجہ بتا دی۔ انہوں نے کہا کہ 2015 میں ان کے والد، پارٹی کارکنوں اور سپورٹرز نے بہت محنت کی اسلیے وہ ن لیگ کو ہارانے میں کامیاب ہوئے، لیکن اس بار انہیں سو فیصد امید تھی کہ وہ آسانی سے الیکشن جیت جائیں گے اسلیے وہ ووٹرز کے پاس بار بار نہیں گئے۔ ہماری یہی خود اعتمادی ضمنی انتخاب میں ناکامی کی اصل وجہ بنی۔

انہوں نے مزید کہا کہ حکومت نے آخری دنوں میں ترقیاتی کاموں کیلئے خزانے کے منہ کھول دیئے تھے جس کی وجہ سے ن لیگ کے امیدوار پیر اقبال شاہ ضمنی انتخاب جیتنے میں کامیاب ہوئے۔

واضح رہے کہ لودھراں این اے 154 ضمنی انتخاب میں ن لیگ کے پیر محمد اقبال شاہ نے پی ٹی آئی کے علی ترین کو دھول چٹائی تھی۔ انتخاب میں 10 امیدوار مدمقابل ہوئے، پی ٹی آئی کے جہانگیر ترین کے بیٹے علی ترین اور مسلم لیگ ن کے امیدوار پیر محمد اقبال شاہ میں کانٹے کا مقابلہ ہوا۔ پیپلز پارٹی نے مرزا علی بیگ اور تحریک لبیک پاکستان نے ملک اظہر کو میدان میں اتارا۔

این اے 154 لودھراں کی نشست سپریم کورٹ سے اثاثہ جات کیس میں پی ٹی آئی کے رکن قومی اسمبلی جہانگیر ترین کے نااہل ہونے کے بعد خالی ہوئی تھی۔