ممبئی حملہ بھارتی حکومت کا سوچا سمجھا منصوبہ، سازش بے نقاب


اسلام آباد (24 نیوز) ممبئی حملہ بھارتی حکومت کا سوچا سمجھا منصوبہ تھا، جرمن مصنف ایلیس ڈیوڈسن کی کتاب ’بھارت کی دھوکہ دہی‘ نے بھانڈا پھوڑ دیا۔

غیرجانبدار جرمن مصنف ایلیس ڈیوڈسن کی کتاب ’بھارت کی دھوکہ دہی‘ میں 26 نومبر 2008 کے ممبئی حملوں کے حوالے سے لکھا گیا ہے کہ بھارت کی جانب سے یہ حملے سوچی سمجھی سازش تھی اور اس میں امریکہ اور اسرائیل بھی ملوث تھے۔ کتاب میں اس بات کا بھی انکشاف کیا گیا ہے کہ پولیس اور ایجنسیز نے ان حملوں کی تحقیقات جانبداری سے کرتے ہوئے حقائق کو مسک کیا۔ اس کے علاوہ بھارتی عدلیہ نے بھی جانبداری سے کام لیا۔

کتاب میں مزید کہا گیا ہے کہ بھارتی حکومت نے اجمل قصاب کو حملوں سے 20 دن پہلے گرفتار کر لیا تھا اور اس نے جو بیان دیا اس کو بعد میں تبدیل کروا لیا گیا تھا۔ اس کتاب میں یہ بھی کہا گیا کہ بھارتی حکومت نے اجمل قصاب پر جھوٹا الزام لگا کہ وہ پورا ہوٹل تباہ کرنا چاہتا تھا۔ یہ حملے بھارتی انتہا پسند سیاسی جماعتوں کو فائدہ پہنچانے کیلئے کروائے گئے۔