ریلوے اسٹیشن: خوشیوں، غموں کی آماجگاہ

ریلوے اسٹیشن: خوشیوں، غموں کی آماجگاہ


 24 نیوز:ریلوے اسٹیشن کا نام ذہن  میں آتے ہی چھک چھک کرتی اور ہارن بجاتی آتی جاتی گاڑیاں پلیٹ فارم پرمسافروں کی چہل پہل کھانے پینے کی اشیا کے ٹھیلے والوں کی آوازیں یہ ایک ایسا رومانوی ماحول ہے جسے انسان زندگی بھر نہیں بھول سکتا۔

 انتظار اور بے چینی کی کشمکش لیے مسافر بار بار ریلوے لائن کو دیکھتے ہیں کوئی اپنے بچوں سے تو کوئی اپنے والدین سے ملنے ایک شہر سے دوسرے شہر جاتا ہے۔ اور انتظار کی کشمکش کا سلسلہ جاری رہتا ہے۔

ریلوے اسٹیشن پر اپنوں کو دیکھنے اور ان سے ملنے کی خوشی تو ہوتی ہے لیکن انتظار کی گھڑیاں بھی کرب ناک ہوتی جاتی ہیں ریلوے اسٹیشن کہیں منزل مقصود تک پہنچتے تو کہیں آغاز سفر کرتے لوگوں کے لیے شجر سایہ دار سے کم نہیں۔

ریلوے اسٹیشن ایسی جگہ ہے جہاں بیک وقت حجر و وصل پنپتا ہے منزل پا لینے کی امید لیئے نہ جانے کتنے مسافر روزانہ عارضی قیام کرتے ہیں۔