دہشتگردی کیخلاف جید علماءکا فتویٰ، غلطیاں درست کرنے کا موقع ملے گا:صدرممنون

دہشتگردی کیخلاف جید علماءکا فتویٰ، غلطیاں درست کرنے کا موقع ملے گا:صدرممنون


اسلام آباد(24نیوز)ایوان صدرمیں ملک بھر کے جید علماءکرام نے پیغام پاکستان کے نام سے فتویٰ جاری کیا ہے، جس میں دہشت گردی اورطاقت کے بل بوتے پر اپنی مرضی کے مسلک کو دوسرے پر تھوپنا خلاف قانون اور حرام قراردیا گیا ہے۔

صدرممنون حسین کی صدارت میں ہونے والی تقریب میں پیغام پاکستان قومی بیانیے کی شکل اختیارکر کیا، صدرمملکت کہتے ہیں کہ اس بیانئے سے 70 اور 90 کی دہائیوں کی غلطیاں درست کرنے کا موقع ملے گا،دہشت گردی کیخلاف اس فتوی پر ملک بھر کے تمام مکاتب فکرکے علماءکرام نے دستخط کیے ہیں، وزیرخارجہ خواجہ آصف اور وزیر داخلہ احسن اقبال نے پیغام پاکستان کودہشت گردی کے مکمل خاتمے کی جانب اہم پیش رفت قراردیا ہے۔

مولانا فضل الرحمان کہتے ہیں کہ دہشت گردی کیخلاف تھے، ہیں اور رہیں گے، قومی بیانیئے کی روح تک پہنچنا ہوگا،تمام مکاتب فکرکے علماءکرام نے جس رواداری کا مظاہرہ کیا ہے، اس سے لگتا ہے کہ دہشت گردی کا خاتمہ اور تمام مسالک کے ماننے والوں کے مابین ہم آہنگی اور برداشت کے رشتے مضبوط ہونگے۔