باب پشاور فلائی اوور میں تعمیر کے 2 سال بعد ہی دراڑیں پڑ گئیں


پشاور (24نیوز) حیات آباد میں واقع باب پشاور فلائی اوور میں تعمیر کے 2 سال بعد ہی دراڑیں پڑ گئی ،پونے 2 ارب روپے کی لاگت سے بننے والا یہ پل گزشتہ 4 برسوں میں صوبائی حکومت کا سب سے بڑا منصوبہ تھا جس کا افتتاح جنوری 2016ء میں کیا گیا۔

تفصیلاتکےمطابق حیات آباد میں واقع باب پشاور فلائی اوور میں دراڑیں پڑ گئیں تو شہری بھی پریشان ہو گئے۔ فلائی اوور کے نچلے حصے کا سمینٹ اکھڑ گیا ہے جبکہ کئی جگہ سے ٹوٹ پھوٹ کا شکار ہے جو کسی بھی وقت حادثے کا سبب بن سکتا ہے۔

دوسری جانب پشاور ڈیویلپمنٹ اتھارٹی کے مطابق پل میں پڑی دراڑیں خطرے کی بات نہیں ہے۔ پل کے ایک پلر کے نیچے سے سمینٹ اکھڑ گیا ہے جس کی مرمت کیلئے پی ڈی اے کے اہلکاروں نے معائنہ کیا ہے اور جلد ہی اسے ٹھیک کر دیا جائیگا۔ باب پشاور فلائی اوور منصوبہ موجودہ حکومت کے بڑے منصوبوں میں ایک ہے جسے 6 ماہ کی قلیل مدت میں مکمل کیا تھا تاہم صرف 2 سال بعد اس پل میں دراڑیں پڑنے سے اس فلائی اوور کی خوبصورتی بھی مانند پڑ گئی ہے۔