ایم ایم اے کا کراچی میں پاور شو،،حکمرانوں نے ملک کا بیڑا غرق کر دیا:فضل الرحمان


کراچی( 24نیوز ) متحدہ مجلس عمل کے سربراہ مولانا فضل الرحمان نے ووٹ کو نظام کی تبدیلی کا واحد ذریعہ قرار دیا، موجودہ دور میں جنگ بندوق اور تلوار سے نہیں،ووٹ سے جیتی جاتی ہے،حکمرانوں نے ملک کا بیڑا غرق کر دیا،امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے ایک بار پھرملک میں اسلامی نظام رائج کرنے کے بیانیے کو دہرایا،کہتے ہیں حقیقی تبدیلی کے لیے عوام25جولائی کو کتاب پر مہر لگائیں۔
کراچی میں بڑے انتخابی جلسہ سے خطاب کرتے ہوئے مولانا فضل الرحمان نے حکمرانوں کو تنقید کے خوب نشتر چلائے،کہا کہ بنیادی سہولیات فراہم نہ کرنے والوں کواقتدار کا حق نہیں،عوام کوہمیشہ قر بانی کا بکرا بنایا گیا،کے پی کے کا قرضہ ساڑھے تین سو ارب سے تجاوز کر چکا ہے۔بنیادی انسانی حقوق کا تحفظ ریاست کی اولین ذمےداری ہوتی ہے، حکمران جان ومال کا تحفظ نہیں دے سکے،کیا ان کو اقتدار پر مسلط رہنے کا حق ہے؟
مولانا فضل الرحمان نے کہا کہ آج پاکستان کے عوام کی عدالت لگی ہوئی ہے، کراچی نے جو ناکام پالیسیوں کے مناظر دیکھے ہیں وہ کسی اور شہری نے نہیں دیکھے ہوں گے، ہم عالمی بینک اور آئی ایم ایف کے مقروض ہیں جبکہ قرضوں کی ادائیگی کانظام موجودنہیں، ایک حکمران نے کہا کہ مسلم لیگ ن کی حکومت نے قرضے بڑھادیے، تسلیم کرتاہوں، خیبرپختونخوا میں ایم ایم اے کی حکومت نے قرضہ 80 ارب روپے سے کم کردیا تھا جبکہ اس کی واپسی کی صلاحیت بھی صوبے نے خود پیدا کردی تھی۔

یہ خبر بھی لازمی پڑھیں----- سیاسی کارکنوں پر دہشت گردی کا مقدمہ قابلِ مذمت ہے:آصف زرداری
آج خیبرپختونخوا میں حکومت نے ساڑھے3سو ارب کا قرضہ لاد دیا اور یہ دعوے تبدیلی کے کرتے ہیں، اسٹیٹ بینک نے سود پر قرضے کی شرح ڈھائی فیصد بڑھا دی ہے، اگر سیاسی حکومت ہوتی تو لوگ آسمان سر پر اٹھا لیتے، ملک میں زراعت تباہ ہوگئی ہے جبکہ بھارت آبی جارحیت کا مرتکب ہورہا ہے اور ہمارے دریاوں پر ڈیم بنارہا ہے۔
امیر جماعت اسلامی سراج الحق نے عوام کا طاقت کا حقیقی سرچشمہ قرار دیا،کہتے ہیں،اقتدار ملا تو ملک میں اسلامی نظام رائج کریں گے،حکمرانوں نے کراچی،پنجاب،کے پی کے،بلوچستان تباہ کر دیا۔