چیف جسٹس پاکستان نے عید کی خوشیاں فاؤنٹین ہاؤس کے مریضوں کے ساتھ منائیں


لاہور (24 نیوز)  چیف جسٹس آف پاکستان جسٹس میاں ثاقب نثار نے عید کی خوشیاں بھی فاؤنٹین ہاؤس کے مریضوں کے ساتھ منائیں، ان میں تحائف تقسیم کیے اور ریٹائرمنٹ کے بعد سماجی کام کرنے کے عزم کا اظہار کیا۔

 24 نیوز ذرائع کے مطابق جسٹس آف پاکستان اپنی فیملی کے ہمراء فاؤنٹین ہاوس پہنچے جہاں چیئرمین فاؤنٹین کمیٹی امجد ثاقب، صدر پروفیسر ہمایوں احسان نے استقبال کیا اور دو کم سن بچوں نے انہیں پھول پیش کیے۔

چیف جسٹس پاکستان نے فاؤنٹین ہاؤس میں خواتین میں تحائف تقسیم کیے ،بعض خواتین نے چیف جسٹس کو مسائل سے آگاہ کیا جس پر چیف جسٹس نے یقین دہانی کرائی کہ متعلقہ افسران کو خود آپ کے پاس لے کر آؤں گا اور ان کے مسائل ترجیحی بنیادوں پر حل کیے جائیں گے۔

انہوں نے فاؤنٹین ہاؤس انتظامیہ کو امدادی چیک جبکہ مریضوں میں تحائف تقسیم کئے۔ عید کے پرمسرت موقع پر چیف جسٹس پاکستان کو اپنے درمیان پاکر مریضوں کی عید کی خوشیاں دوبالا ہوگئیں۔

یہ خبر بھی پڑھیں: صدر ، وزیر اعظم سمیت دیگر سیاسی رہنماؤں کی قوم کو عید کی مبارکباد

چیف جسٹس کے ہمراہ ان کے بیٹے نجم ثاقب و دیگر فیملی ممبر تھے۔ ڈین پاکستان کالج آف لاء پروفیسر ہمایوں احسان بھی چیف جسٹس کے ہمراہ تھے، چیف جسٹس سے فاؤنٹین ہاؤس کی مینجمنٹ نے بھی ملاقات کی اور ان کے فلاحی جذبے کو سراہا، انہوں نےفاؤنٹین ہاؤس کی کتاب پر اپنے تاثرات بھی درج کیے۔

چیف جسٹس پاکستان میاں ثاقب نثار اور ان کے بیٹے نجم ثاقب کو فاؤنٹین ہاؤس انتظامیہ کی جانب سے پینٹنگ دی گئی، چیف جسٹس نے فاؤنٹین ہاؤس میں میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ آنے والی نسلوں کے لئے ملک کا قرض اتارنے کا وقت ہے،علم کے بغیر ترقی نہیں ہوسکتی، عوام کی رائے بتانے میں میڈیا کا اہم کردار ہے، میڈیا مثبت باتوں کو اُجاگر کرے۔