’’پانی نہیں ملتا تو کوکا کولا پی لیں‘‘

’’پانی نہیں ملتا تو کوکا کولا پی لیں‘‘


اسلام آباد(24نیوز)سپریم کورٹ نےنئی گج ڈیم کی تعمیر کے کیس میں چیف سیکرٹری سندھ کو طلب کر لیا۔ جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ ممکن ہے عدالت ڈیم تعمیر کے حکم پرنظرثانی کر لے۔ جسٹس اعجازالاحسن نے ریمارکس دیئےکہ ڈیم کی لاگت میں اضافہ ہو رہا ہے  پھر سندھ حکومت کہے گی پانی نہیں ملتا تو کوکا کولا پی لیں۔

سپریم کورٹ میں جسٹس عظمت سعید کی سربراہی میں تین رکنی بنچ نے نئی گج ڈیم کی تعمیر کے کیس کی سماعت کی۔عدالت نے سندھ حکومت کے روئیے پر اظہار برہمی کرتے ہوئے چیف سیکرٹری سندھ کو طلبی کا نوٹس جاری کردیا، بیان رکارڈبھی کیا جائے گا۔

عدالت کو بتایا گیا کہ نئی گج ڈیم ضلع دادو میں بنے گا جس پر جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس دیئےکہ چیف سیکرٹری بیان دیدیں کہ دادو کی زمین سیراب کرنے کی اور عوام کو پانی ضرورت نہیں۔

جسٹس عظمت سعید نے ریمارکس دیئے کہ سندھ والوں کو پانی نہیں چاہیے تو انکی مرضی۔چیف سیکرٹری کے بیان کے بعد عدالت اپنے احکامات پر نظرثانی کرسکتی ہے ممکن ہے ڈیم تعمیر کے حکم پربھی نظرثانی کر لیں۔

ڈپٹی اٹارنی جنرل نے عدالت کو بتایا کہ منصوبہ 26 ارب کا تھا جو 46 ارب تک پہنچ چکا ۔جسٹس اعجاز الاحسن نے ریمارکس دئیے کہ ہر گزرتے دن لاگت میں اضافہ ہو رہا ہے۔ سندھ حکومت پھر کہے گی پانی نہیں ملتا تو کوکا کولا پی لیں،عدالت نے سماعت ملتوی کردی۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer