جی ڈی پی کم،قرضوں،واجبات میں ریکارڈ اضافہ

جی ڈی پی کم،قرضوں،واجبات میں ریکارڈ اضافہ


اسلام آباد(24نیوز)پاکستان کے قرضوں اور واجبات میں ریکارڈ اضافہ، ملکی تاریخ میں پہلی بار جی ڈی پی کے تین  فیصد سے کم سطح تک پہنچ گئی، مجموعی قرضوں کا حجم 350 کھرب روپے سے بھی تجاوز کر گیا۔

سٹیٹ بینک کے مطابق پاکستان کے قرضے اور واجبات کا مجموعی حجم تاریخ میں پہلی 350 کھرب 94 ارب 50 کروڑ روپے کی بلند ترین سطح پر پہنچ گیا،رواں مالی سال نو ماہ کے دوران مجموعی قرضوں میں 52 کھرب 15 ارب 30 کروڑ روپے کا رکارڈ اضافہ ہوا، پاکستان کے ہر پر اوسطاًشہری قرضوں کا بوجھ ایک لاکھ 69 ہزار روپے ہو گیا، نو ماہ قبل ہر شہری اوسطا ایک لاکھ 43 ہزار 800 روپے کا مقروض تھا۔

نو ماہ کے دوران مجموعی قرضوں اور واجبات میں 17.5 فیصد اضافہ ہوا، گزشتہ مالی سال اس عرصے میں قرضوں میں اضافے کی شرح 12.9 فیصد تھی، سٹیٹ بینک کے مطابق رواں مالی سال کے نو ماہ کے دوران حکومت کے اندرونی قرضے 10.7 فیصد اضافے سے 181 کھرب 71 ارب روپےاور بیرونی قرضے 23.5 فیصد اضافے سے 96 کھرب 26 ارب روپے تک پہنچ گئے، جبکہ نجی شعبے کے بیرونی قرضوں کا حجم اس دوران 16 کھرب 54 ارب روپے سے بڑھ کر 21 کھرب 8 ارب روپے ہو گیا۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer