نوازشریف کے نااہل ہونے کے بعد ن لیگ کا اتحاد خطرات کی زد آگیا

نوازشریف کے نااہل ہونے کے بعد ن لیگ کا اتحاد خطرات کی زد آگیا


 اسلام آباد(24نیوز): آخری پارلیمانی سال کے دوران حکمران ن لیگ قومی اسمبلی میں مشکلات کا شکاردکھائی دینے لگی،ایوان میں حاصل عددی برتری ریت کی طرح حکومت کے ہاتھوں سے سرکنے لگی،مسلم لیگ ن کن مشکلات کا شکارہے۔

میاں نواز شریف کی نااہلی کے بعد حکومت مشکلات میں گھری ہوئی ہے، ن لیگی ارکان اسمبلی کے پرانے دکھ جاگ رہے ہیں اوریوں لگتا ہے جیسے ہرکوئی سکوربرابرکرنے کے چکرمیں ہے، ن لیگ کے کئی معروف نام حکومت سے اکھڑے اکھڑے دکھائی دے رہے ہیں۔ قومی اسمبلی میں ن لیگی ارکان کی تعداد 188ہے مگراب یہ نمبر گیم پورارکھنا حکومت کے لیے درد سر بنا ہوا ہے، کیونکہ ن لیگ میں دھڑے بندی بالکل واضح ہوچکی ہے،عوامی مسلم لیگ کے سربراہ شیخ رشید تو ن لیگ کے ناراض ارکان کی ایک فہرست بھی لہرا چکے ہیں۔

پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان بھی کہہ چکے ہیں کہ کئی ن لیگی ارکان حکومت سے ناراض ہیں جس کی وجہ سے حکومت اپنی مدت پوری کرتی نظر نہیں آتی۔وفاقی وزیر ریاض پیرزادہ کھل کراپنی جماعت کی پالیسیوں پرتنقید کرتے ہیں ،انہوں نے تون لیگ کو بچانے کے لیے میاں شہبازشریف کو پارٹی قیادت سونپنے کی تجویز دی تھی. نوازشریف کے نااہل ہونے کے بعد ن لیگ کا اتحاد خطرات کی زد میں ہے، بے یقینی کی یہ صورت حال آئندہ عام انتخابات کے دوران بھی ن لیگ کے لیے بڑی سیاسی مصیبت کا پیش خیمہ بن سکتی ہے۔