"گھبرانا نہیں،کامیابی میں کبھی سیدھی لائن نہیں ہوتی"، وزیراعظم نے نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کا افتتاح کردیا



اسلام آباد(24نیوز) وزیراعظم عمران خان نے نیا پاکستان ہاؤسنگ پروگرام کا افتتاح کردیا۔ انہوں نے کہا نیاپاکستان ہاؤسنگ اسکیم پورے پاکستان میں بنائیں گے۔

اسلام آباد میں نیا پاکستان ہاؤسنگ اسکیم کی افتتاحی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے وزیراعظم عمران خان کا کہنا تھا کہ یہ منصوبہ ایک شروعات ہے، ہم ملک بھر میں مختلف جگہوں پر اسکیمیں شروع کریں گے۔

وزیراعظم عمران خان نے کہا 23سال پہلے سیاست شروع کی تھی۔پاکستان سے متعلق میرا خواب بالکل سیدھا ہے.  کبھی کنفیوژن نہیں تھی کہ سیاست میں کیوں آیا، میراویژن بڑا کلیئر ہے کہ مجھے کرنا کیا ہے، ہمارا ویژن ہے پاکستان کو فلاحی ریاست بنانا ہے۔ یہ آسان ہوتا تو 70 سال میں لوگ کر چکے ہوتے، یہ اتنا آسان نہیں ہے۔

وزیراعظم نے کہا کہ ہمارے پاس پیسہ نہیں، بینک کرپٹ ہیں، 10 سال میں جو لوٹ مار ہوئی سب سے زیادہ تاریخی قرض ہم پر ہے، ایک دن میں 650 ارب سود دے رہے ہیں لیکن فکر نہ کریں، ہم جب نبی کریم ﷺ کے بتائے ہوئے راستے پر چلیں گے تو اللہ کی برکت آئے گی۔

انہوں نے بتایا کہ جب انہوں نے کینسر اسپتال بنانے کا سوچا تو سب نے ان کا میرا مذاق اڑایا، یہاں تک ڈاکٹر بھی یہ کہتے تھے کہ یہ کیا کرنے چلا ہے ، یہ نہیں ہوسکتا۔انہوں نے کہایہ تکبر ہے کہ انسان یہ سوچے کہ میں کامیاب ہوگیا انسان کو کامیابی اللہ تعالیٰ کی ذات دیتی ہے۔

عمران خان نے کہا کہ پاکستان میں تعلیم کے تین الگ الگ نظام چل رہے ہیں۔علامہ اقبال نے دنیا میں ایک فلاحی ریاست بنانے کا خواب دیکھا،  چھوٹا سا مفاد پرست طبقہ پاکستان کو ترقی نہیں کرنے دیتا۔سابق حکمران ملک کو مقروض چھوڑ کر گئے،ہماری کوشش ہے کہ کمزور طبقے کو اوپر اٹھائیں، تنخواہ دار طبقے کے پاس پیسے نہیں ہیں۔

وزیراعظم نے کہا کہ کسی نے آج تک کچی آبادیوں کا نہیں سوچا۔ کچی آبادیاں ہمارے لیے اثاثہ ہیں،وزیراعظم عمران خان پاکستان میں ایک کروڑ گھروں کی کمی ہے۔ انہوں نے بتایا کہ ایک کمپنی سے بات ہوئی وہ صرف ایک ہفتے میں ایک منزل کھڑی کر سکتے ہیں اور یوں تھوڑی ہی مدت میں وہ کم جگہ 50 منزل عمارت رہائشی بنا دیں گے جہاں رہائش ہو گی اور ساتھ ایک پلازہ تعمیر کیا جاسکتا ہے جہاں کمرشل دکانیں وغیرہ بنائی جائیں گی۔

انہوں نے کہا کہ ہم پانچ ارب کا قرضہ لوگوں کودیں گے کہ وہ اپنے گھر بنا سکیں ، سرکاری ملازمین کیلئے راولپنڈی ، اسلام آباد ، بلوچستان اور کشمیر میں گھر بنائے جارہے ہیں۔

انہوں نے آخر میں قوم کو نصیحت کی کہ انسان جب بھی  کوشش کرتا ہے  تو اس میں کبھی سیدھی لائن نہیں ہوتی بلکہ اونچ نیچ ہوتی رہتی ہے ، میں قوم سے کہتا ہوں کہ مشکل سے گھبرانا نہیں ہے، زندگی میں مشکل وقت آتے رہتے ہیں،ہم عظیم قوم بنیں گے ، اوروہی اصول جو سرکار مدینہ ﷺ نے سکھائے تھے ، نچلے طبقے کو اوپر اٹھانے کیلئے انہی اصولوں پر عمل پیرا ہوں گے ۔ 

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔