ناصر جمشید پر 10سال کیلئے کرکٹ کے دروازے بند

ناصر جمشید پر 10سال کیلئے کرکٹ کے دروازے بند


لاہور( 24نیوز )پی ایس ایل سپاٹ فکسنگ اسکینڈل میں پی سی بی اینٹی کرپشن ٹربیونل نے ناصر جمشید کو مجرم قرار دیتے ہوئے ان کے کرکٹ کھیلنے پر دس سال کی پابندی عائد کردی۔

شرجیل خان ،خالد لطیف اور شاہ زیب حسن کے بعد پی سی بی اینٹی کرپشن ٹربیونل نے ٹیسٹ اوپنر ناصر جمشید کو بھی مجرم قرار دیتے ہوئے ان کے کرکٹ کھیلنے پر دس سال کی پابندی عائد کردی۔

اینٹی کرپشن ٹربیونل کے فیصلے کے مطابق پابندی ختم ہونے کے بعد ناصر جمشید کرکٹ کے انتظامی امور ،کوچنگ اور اس وابستہ کسی شعبے میں کوئی عہدہ نہیں لے سکیں گے۔

 یہ بھی پڑھیں:   سمندر پار پاکستانیوں کو ووٹ کا حق مل گیا

فیصلہ آنے کے بعد میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے پی سی بی کے قانونی مشیر تفضل رضوی نے کیس میں کامیابی کے باوجود دکھ اظہار کرتے ہوئے کہا کہ یہ ٹربیونل کے فیصلے سے یہ ثابت ہو گیا کہ ناصر جمشید ہی فکسنگ اسکینڈل کے مرکزی کردار ہیں ۔ ناصر جمشید کو اینٹی کرپشن ٹربیونل کے فیصلے کے خلاف خود مختار ایڈجیوڈیکیٹر کے سامنے اپیل کا حق حاصل ہے۔