پاکستان نیشنل کونسل آف آرٹس میں فنکاروں کی فنکاریاں

پاکستان نیشنل کونسل آف آرٹس میں فنکاروں کی فنکاریاں


  اسلام آباد ( 24نیوز ) پاکستان نیشنل کونسل آف آرٹس میں فنکاروں نے اپنے فن کے ذریعے معاشرے میں موجود آمریت منافقت اور دیگر سماجی برائیوں کو مزاح کے ذریعے ہلکے پھلکے انداز میں پیش کیا۔

ظالمانہ اور منافقت معاشرتی نظام کو درہم برہم کرنے کے لئے صدیوں سے اپنا جال بچھائے ہوئے ہے۔ پاکستان نیشنل کونسل آف آرٹس میں پونجہ شکنجہ کے نام سے ڈرامہ پیش کیا گیا۔جس کا موضوع معاشرے میں موجود سےاسی منافقت، آمریت اور تضادات سے بھرپور قدامت پسندانہ سوچ تھا۔ ڈرامے کی تحریر مشہور ایکٹر اور رایٹر جمال شاہ اور ابراہیم گوگی نے کی جبکہ آصف شاہ اور آکاش بخاری اس ڈرامے کے ہدایتکار ہیں۔

ٹیلی ویژن اور تھیٹر آرٹسٹ علی سلیم ڈرامے کے مرکزی کردار میں نظر آئے اس کے علاوہ راولپنڈی، لاہور اور ایک چینی تھیٹر آرٹسٹ نے ڈرامے میں اپنے فن کا مظاہرہ کیا اور حساس موضوعات کو ہلکے پھلے انداز میں پیش کرکے ناظرین کی توجہ کا مرکز بنے رہے۔ڈرامے کا اختتام فیض احمد فیض کی مشہور نظم ہم دیکھیں گے کی پیروڈی ہم جیتیں گے کے ساتھ کیا گےا اور ناظرین سے خوب داد وصول کی۔ پونجہ شکنجہ 20اگست تک پاکستان کونسل آف آرٹس کی زینت رہےگا۔

شازیہ بشیر

Content Writer