تحفظات کے باوجود پیپلزپارٹی نے جمہوری عمل کا حصہ بننے کا فیصلہ کیا: بلاول بھٹو



سلام آباد ( 24نیوز ) پاکستان پیپلز پارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ دوبڑی جماعتوں نے آج جوحرکت کی ہے،عوام اس تماشے کو پسند نہیں کرتے۔

 احتجاج کسی بھی جماعت کا حق ہوتا ہے۔ آج سرکاری بنچوں سےبھی احتجاج ہوا ہے۔ پارلیمنٹ سپریم ادارہ ہے،اس کارکن بننے پرخوشی ہے۔جوتماشا دوبڑی جماعتوں نے کیا اس نےقوم کومایوس کیا۔امید ہے کہ اسپیکرتمام جماعتوں کے ساتھ مل کرہاؤس کوچلائیں گے۔ یہ ایوان سپریم ہے اور تمام اداروں کی ماں ہے۔ ہم نے ماضی سے سبق نہیں سیکھا۔

انتخابات کے نتائج دینے میں بھی تاخیرکی گئی۔ انتخابات سے قبل اوربعد میں دھاندلی کی گئی۔ ملک بھر میں پولنگ اسٹیشنزسے پولنگ ایجنٹس کوباہرنکالا گیا۔ تحفظات کے باوجود پیپلزپارٹی نے جمہوری عمل کا حصہ بننے کا فیصلہ کیا۔الیکشن کے دوران ہونیوالے تمام دہشت گرد حملوں کی مکمل تحقیقات کرائی جائیں۔

وزیراعظم نے کرپشن کا خاتمہ،پانی کےمسائل حل کرنے کا وعدہ کیا ہے۔ وزیراعظم  نے وعدہ کیا ہے وہ لوگوں کو  ایک  کروڑ نوکریاں اور50 لاکھ گھردیں گے۔عمران خان کسی مخصوص جماعت کے وزیراعظم نہیں۔ عمران خان ان پاکستانیوں کے بھی وزیراعظم ہیں جن کوانہوں نے زندہ لاشیں اورگدھے کہا تھا۔

عمران خان ان پاکستانیوں کے بھی وزیراعظم ہیں جن کوانہوں نے زندہ لاشیں اورگدھے کہا تھا۔امید ہے خان صاحب نفرت انگیزسیاست کودفن کرکے آگے چلیں گے۔ پاکستان پیپلزپارٹی عوام کے مسائل اورجمہوریت پرکوئی سمجھوتا نہیں کرے گی۔پارٹی سربراہ نے شہید ہارون بلور، شہید سراج رئیسانی، شہید اکرام اللہ گنڈا پور کو خراج عقیدت پیش کیا۔ انھوں نے مستونگ حملے کے شہدا کو بھی خراج عقیدت پیش کیا۔

شازیہ بشیر

Content Writer