کوئٹہ میں چرچ کے قریب خود کش دھماکہ، 8افراد جاں بحق ، 25زخمی


کوئٹہ (24 نیوز): کوئٹہ کو دہشت گردوں نے پھر خون میں نہلا دیا، چرچ میں خود کش دھماکہ اور فائرنگ سے 8 افراد جاں بحق، 25 زخمی ہوگئے، ریسکیو آپریشن جاری ہے، وزیر اعلی، وزیر داخلہ بلوچستان نے واقعے کی سخت مذمت کی۔

امن کے دشمن ملک کی عبادت گاہوں کے دشمن ہوگئے، کوئٹہ کے زرغون روڈ پر واقع چرچ کو دہشت گردوں نے خون میں نہلا دیا، مسیحی برادری کرسمس کی عبادت میں مشغول تھی، کہ دہشت گرد نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا، دھماکے کے بعد چرچ کے اندر سے فائرنگ کی آوازیں بھی آتی رہیں، ہر طرف خون ہی خون، بھگدڑ مچ گئی۔ دھماکے اور فائرنگ سے 8 افراد جاں بحق جبکہ خواتین اور بچوں سمیت 25 افراد زخمی ہوگئے، سیکیورٹی فورسز اور دہشتگردوں کے درمیان فائرنگ کا تبادلہ ہوا  جس میں تمام دہشتگرد مارے گئے ہیں، حادثے کی اطلاع ملنے پر ریسکیو ٹیمیں جائے وقوعہ پر پہنچ گئیں اور زخمیوں کو سول ہسپتال منتقل کردیا۔

وزیر داخلہ بلوچستان سرفراز بگٹی نے24 نیوز سے گفتگو کرتے ہوئے  بتایا کہ دہشتگردوں کا ہدف چرچ تھا،  دو خود کش حملہ آور تھے،  گارڈز نے شک ہونے پر ایک حملہ آور کو دروازے پر روکا تو اس نے خود کو دھماکے سے اڑا دیا جس کے بعد دوسرا حملہ آور گرجا گھر میں داخل ہونے میں کامیاب ہوگیا اور اس نے اندر گھس کر فائرنگ شروع کر دی، جس کو  سیکیورٹی فورسز نے مار  ڈالا۔

آئی جی بلوچستان معظم انصاری کا کہنا تھا کہ بروقت آپریشن سے نقصان کم ہوا، ایک دہشت گرد کو باہر ہی مار گرایا، دوسرے حملہ آور بھی اندر داخل نہیں ہوسکا۔