زینب قتل کیس کا فیصلہ آج سنایا جائے گا


قصور(24نیوز)قصور میں معصوم زینب کے قاتل آخر کار کیفر کردار کو پہنچ گیا، یہ پہلا کیس ہے جس پر ردعمل نے اقتداد کے ایوانوں کو جھنجھوڑ کر رکھ دیا، یہ وجہ تھی کے بہت جلد ملزم بھی پکڑا گیا اور اس کا ٹرائل بھی مکمل ہوگیا، آج انسداد دہشت گردی کی عدالت زینب کے قاتل کو سزا سنائے گی۔

تفصیلات کے مطابق جنوری 2018 کا دن ننھی زینب گھر سے ٹیوشن پر گئی، واپس گھر نہیں پہنچی، تین روز بعد زینپ کی لاش گھر کے قریب کچرے کے ڈھیر سے ملی،معصوم زینب کے قتل نے پوری قوم کو جھنجھور کر رکھ دیا، پولیس نے بھی ملزم کو ڈھونڈ نکالنے کی ٹھان لی، درجنوں افراد کو حراست میں لے کر تفتیش کی گئی، لیکن اصل مجرم قابو نہ آیا، سیکڑوں لوگوں کو ڈی این اے ٹیسٹ کرائے گئے۔

زینب کے قتل کی تحقیقات نے قصور میں معصوم بچیوں سے زیادتی اور ان کے قتل کی داستانیں بھی بے نقاب ہوگئیں، معاملے کی سنگینی کے پیش نظر عدالت عظمی کو مداخلت کرنا پڑی، 10 جنوری کو سپریم کورٹ نے معاملے کا ازخود نوٹس لے لیا،عدالت نے ملز کی گرفتار کیلئے 15 جنوری کی ڈیڈلائن دی، پھر وزیر اعلی پنجاب شہباز شریف بھی کود پڑے اور مجرم کی فوری گرفتاری کیلئے پولیس کو احکامات جاری کئے۔

بالآخر 23 جنوری تمام تر کوششوں کے بعد ملزم عمران کو گرفتار ہوگیا، جو کوئی اور نہیں امین انصاری کا محلے دار ہی نکلا، عمران نے تفتیش کے دوران زینب سمیت 8 اور بچیوں سے زیادتی اور ان کے قتل کا اعتراف کرلیا، رپورٹ سپریم کورٹ میں پیش کر دی گئی۔