پلوامہ حملہ:مودی سرکار پاکستان دشمنی میں پاگل،نیا شوشہ چھوڑدیا



دہلی( 24نیوز )پلوامہ حملے کا الزام پاکستان پر ثابت کرتے کرتے  بھارت پاگل ہو گیا ، لال مسجد آپریشن 2007 میں مارے جانے والے عبدالرشید غازی کو ذمہ دار ٹھہرا کر تلاش شروع کر دی-

سیانے کہتے ہیں پہلے تولو ،پھر  بولو۔۔ لیکن یہ بات مودی سرکار کی عقل سے بالا ہے، بھارت میں پتہ بھی ہل جائے تو بنا سوچے سمجھے ، بلا تحقیق پاکستان پر الزام تراشی بھارتی وطیرہ ہے اور بھارت کو ہمیشہ اس میں منہ کی ہی کھائی ہے۔

پلوامہ حملے کا الزام بھی پاکستان پر لگانے کے بعد بھارت اسے ثابت کرنے کے جو جتن کر رہا ہے وہ اسے سٹھیانے کے لیے کافی ہے،بھارت نے پاکستان دشمنی کے اندھے پن میں 2007 میں لال مسجد آپریشن میں مارے جانے والے عبدالرشید غازی کو حملے کا ذمہ دار ٹھہرا کر نہ صرف چھاپے مارنے شروع کیے ہیں بلکہ بھارتی خفیہ ایجنسیوں نے اپنے شہریوں کو الو بنانے کیلئے یہ دعوی بھی کر دیا ہے کہ انھوں نے غازی عبدالرشید کی لوکیشن کا پتہ چلا لیا ہے۔

اس سے پہلے بھارت نے عادل ڈار کی ویڈیو سامنے لا کر اسے پلوامہ حملے کا ذمہ دار ٹھہرایا تھا تاہم کشمیری اخبارات کے مطابق عادل 2017 سے قابض بھارتی فوج کی حراست میں تھا،صرف یہی نہیں بلکہ پاکستان کی سفارتی کوششوں اور بھارتی انسانی حقوق کی خلاف ورزیوں کو دنیا سے اوجھل رکھنے کیلئے بھارت پاکستانی وزارت خارجہ کی ویب سائٹ پر پے در پے سائبر حملے بھی کر رہا ہے جنھیں بارہا ناکام بنایا گیا ہے۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer