سعودی مہمانوں کی آمد،اپوزیشن کو تقریبات میں نہ بلا کر حکمرانوں نے چھوٹی سوچ کا مظاہرہ کیا:احسن اقبال

سعودی مہمانوں کی آمد،اپوزیشن کو تقریبات میں نہ بلا کر حکمرانوں نے چھوٹی سوچ کا مظاہرہ کیا:احسن اقبال


نارووال( 24نیوز ) سابق وزیر داخلہ احسن اقبال کا کہنا ہے کہ سعودی ولی عہد کے دورہ پاکستان کا ہم خیر مقدم کرتے ہیں، سعودی عرب اور پاکستان جن کا بہت گہرا ثقافتی ۔ مذہبی سیاسی رشتہ ہے، آج کی دنیا اقتصادیات کی دنیا ہے، اس موقع پر گہرا دکھ ہے کہ سرکاری تقریبات جو سعودی ولی عہد کے لئے دی جارہی ہیں، حکومت نے اپوزیشن کو نہ بلا کر اپنی چھوٹی سوچ کا مظاہرہ کیا ہے۔

ضرور پڑھیں:ڈالر سستا ہوگیا

  میڈیا سے گفتگو میں ان کا کہنا ہے کہ ایسے مہمان کی آمد پر حکومت کو یکسوئی کا مظاہرہ کرنا چاہیے تھا ، حکومت نے اپوزیشن کو ان تقریبات سے باہر رکھ کر پاکستان اور سعودی عرب کے تعلقات کے ساتھ انصاف نہیں کیا، وزیر اعظم کئی دفعہ کہہ چکے ہیں کہ کوئی این آر او نہیں ہو گا ، کسی کا بھی چھوٹ جانا نہ کسی ڈیل کا نتیجہ ہے نہ ڈھیل کا ۔

انہوں نے کہا ہے کہ یہ وہ عدالتی ریلیف ہے جو کسی بھی شخص کو اعلی عدالتوں مل سکتا ہے جب اس کے خلاف جھوٹے مقدمات قائم کیے جائیں گے حکومت کو یہ پتہ چل رہا ہے کہ اب یہ جھوٹے مقدمات اعلی عدلیہ کے سامنے اپنے پاوں پڑ کھڑے نہیں ہو سکتے تو وہ اپنی خفت چھپانے کے لئے اس طرح کا شور مچاتا ہیں لیکن یہ ایک کھلا تضاد ہے ۔

بھارتی فوج اور سیکورٹی ایجنسیز نے کشمیر پر جو ظلم ڈھا رہا ہے اس کا بدترین رد عمل دیکھنے میں آ رہا ہے، بھارت اپنے ظلم سے توجہ ہٹانے کے لئے بین الاقوامی سطح پر تمام الزامات پاکستان پر لگا رہا ہے ، اس وقت کشمیر کی عوام اپنا حق مانگ رہے ہیں، کشمیر کے عوام ظلم کے خلاف احتجاج کر رہے ہیں جو بھارتی سیکورٹی فورسز وہاں کر رہی ہیں، کوئی ایسی کوشش جو پاکستان کو بلاوجہ اس میں ملوث کرنے کی کی جائے گی کامیاب نہیں ہو گی،بھارت کو پتہ ہونا چاہیے کہ اس نے میلی آنکھ سے دیکھنے کی جسارت کی پوری قوم متحد ہوکر اس کا جواب دے گی ،بھارت کو کسی قسم کے بھول نہیں ہونی چاہئے نارووال ۔ مودی سرکار الیکشن میں کامیابی کے لئے یہ سارے ہتھکنڈے استعمال کر رہی ہے۔

اظہر تھراج

Senior Content Writer