ملک کو عمران ، نواز کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑ سکتے: بلاول


بدین (24 نیوز) چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ قصور میں بچوں کو وحشیوں کے رحم و کرم پر چھوڑا گیا۔ کیا اپنی ماں کی قبر پر کھڑے ہو کر قصور کے بچوں کے لئے انصاف مانگا؟


بدین میں فاضل شہید راہو کی برسی کی تقریب سے خطاب کرتے ہوئے چیئرمین پاکستان پیپلز پارٹی بلاول بھٹو زرداری نے کہا کہ ملک کے حالات دیکھتا ہوں تو دل خون کے آنسو روتا ہے۔ سیاستدانوں کے رویے دیکھتا ہوں تو دکھ ہوتا ہے۔ اپنی ماں کی قبر پر کھڑے ہو کر قصور کے بچوں کے لئے انصاف مانگا۔ قصور میں بچوں کو وحشیوں کے رحم و کرم پر چھوڑا گیا۔ قصور میں ایسا کیا ہے کہ وہاں کے ہزاروں بچے غیر محفوظ ہیں؟ کیوں قصور آج پاکستان کا سب سے غیر محفوظ ضلع ہے؟ تمام ثبوتوں کے باوجود وحشی آزاد پھر رہا ہے۔ پیپلز پارٹی نے سندھ میں بچوں کی آگاہی کے لئے نصاب بنایا۔

انہوں نے مزید کہا کہ تبدیلی کا نعرہ لگاتے لگاتے پی ٹی آئی خود تبدیل ہوگئی۔ بچہ بچہ جانتا ہے سندھ کی فلاح کے لئے پیپلزپارٹی نے کام کیا۔ ملک کو عمران خان اور نواز شریف کے رحم و کرم پر نہیں چھوڑ سکتے۔ آصف زرداری پی ٹی آئی والوں کو سیاست سکھا دیں گے۔ اثاثوں کی لڑائی دو لاڈلوں کی لڑائی ہے، سندھ میں سیاسی یتیموں کو جمع کیا گیا۔

میاں صاحب ماڈل ٹاؤن کے شہیدوں کو انصاف کون دے گا؟ آپ کہتے پھرتے ہیں مجھے کیوں نکالا؟ میاں صاحب آپ اپنے چھوٹے بھائی سے پوچھیں کہ مجھے کیوں نکالا؟ اگر حدیبیہ کیس کا فیصلہ صحیح ہے تو آپ کے خلاف فیصلہ بھی صحیح ہے۔ یہ قوم اب آپ کے دھوکے میں نہیں آئے گی، اپنی آنکھیں کھولیں اور حقیقت تسلیم کریں۔ آپ اپنی سیاسی عمر پوری کرچکے ہیں۔ آپ سے نہ بلوچستان، پنجاب، وفاق اور گلگت بلتستان سنبھالا گیا نہ ہی اپنا چھوٹا بھائی۔