شاہ محمود قریشی عالمی عدالت انصاف کے فیصلے پرخوش



(24 نیوز) وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ عالمی عدالت انصاف نے ملٹری کورٹ کے فیصلے کو معطل نہیں کیا،بھارت نے کلبھوشن یادیو کی سزا معطلی اور واپسی کا مطالبہ کیا جسے عالمی عدالت انصاف نے رد کر دیا،کیس کا فیصلہ پاکستان کی فتح ہے،ہم عالمی عدالت کے فیصلے کا احترام کریں گے اورکلبھوشن سے پاکستانی قوانین کے مطابق سلوک کیاجائےگا۔ 

وزارت خارجہ میم پریس کانفرنس کرتے ہوئے وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے کہا کہ بھارت کلبھوشن کا کیس عالمی عدالت انصاف میں لے کر گیا ، بھارت نے عالمی عدالت میں مقدمہ پیش کیاکہ کلبھوشن بےگناہ ہےرہا کیاجائے،عالمی عدالت نے بھارت کا موقف تسلیم نہیں کیا،عالمی عدالت انصاف کا یہ مناسب اور خوش آیند فیصلہ ہے، عالمی عدالت کا فیصلہ پاکستان کی فتح ہے،کلبھوشن کی سزا کو کالعدم نہیں کیا گیا،ہم عالمی عدالت کے فیصلے کا احترام کریں گے اورکلبھوشن سے پاکستانی قوانین کے مطابق سلوک کیاجائےگا۔

شاہ محمود قریشی نے مزید کہا عالمی عدالت نےفوجی عدالت کا فیصلہ معطل یا منسوخ نہیں کیا،اللہ نے پاکستان کو سرخرو کیا ہے،کلبھوشن یادیو کے پاس رحم کی اپیل کی گنجائش تھی،عالمی عدالت نے پاکستانی قوانین کے مطابق کلبھوشن کو اپیل کا حق دیا ہے، کلبھوشن یادیو سے پاکستانی قوانین کے مطابق سلوک کیاجائےگا۔ان کے مطابق عالمی عدالت کا فیصلہ پاکستان کی فتح ہے۔

وزیر خارجہ شاہ محمود قریشی نے مزید کہا کہ پاکستان ایک ذمہ دار ریاست ہے اور فیصلہ سننے کے بعد اب وہ قانون کی روشنی میں اگلے قدم اٹھائے گا،عالمی عدالت انصاف نے انڈین نیوی کے کمانڈر کلبھوشن یادیو کو رہا نہ کرنے کا فیصلہ سنا کر انڈین درخواست رد کر دی ہے۔