نواز،شہباز یک زبان ہوجائیں،ن لیگی ارکان اسمبلی کا مطالبہ


اسلام آباد( 24نیوز ) مسلم لیگ ن کے پارلیمانی پارٹی نے نوازشریف اور شہباز شریف سے مشترکہ بیانیہ اپنانے کا مطالبہ کردیا، شہبازشریف نے کہا ہے کہ حالات سے گبھرانے کی ضرورت نہیں ،الیکشن کی بھرپور تیاری کریں۔
پارلیمنٹ ہاوس میں وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیرصدارت مسلم لیگ ن کے پارلیمانی کمیٹی کے اجلاس میں لیگی ارکان نے شہباز شریف کے سامنے اپنی مشکلات رکھ دیں،،ارکان نے موقف اپنایا کہ نواز شریف کے بیان کے بعد ان کےلئے ماحول سازگار نظر نہیں آرہا،الیکشن مہم میں بھی مشکلات کا سامنا کرنا پڑ سکتا ہے۔
مسلم لیگ ن کی پارلیمانی پارٹی نے نواز شریف کے موقف کی حمایت کرتے ہوئے فیصلہ کیا کہ نادیدہ قوتوں سے مقابلے کا واحدطریقہ انتخابات میں جانا ہے،۔۔شہبازشریف کا کہناتھا کہ چاہے مصلحت ہی اختیار کرنی پڑے الیکشن ضرور لڑیں گے،،اسٹیبلشمنٹ سے مقابلہ انتخابی میدان میں ہو گا۔

یہ بھی پڑھیں:فاٹا اصلاحات پر فوری عملدرآمد کی منظوری

لیگی اراکین نے نواز شریف کے متنازعہ انٹرویو پر تشویش کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ نواز شریف کے انٹرویو کو بھارتی میڈیا بہت زیادہ اچھال رہا ہے ،شہبازشریف نے کہاکہ جس نے انٹرویو کروایا وہ نواز شریف کا سب سے بڑا دشمن ہے، کسی کو بھی ایسی بات نہیں کرنی چاہیے جس سے ملک کو نقصان پہنچے،،انہوں نے کہا کہ نواز شریف کے موقف میں نرمی نظر آئے گی۔

یہ بھی پڑھیں:نواز شریف غداری کے مقدمہ سے بچ گئے،ہائیکورٹ نے حکم دیدیا
 
شہبازشریف نے اراکین کے خدشات، تجویز نوازشریف تک پہنچانے کی یقین دھانی بھی کرائی،،سابق وزیرداخلہ چودھری نثار ، اجلاس میں نہیں آئے، تحریک انصاف کی منحرف رکن مسرت زیب بھی اجلاس میں شریک ہوئیں۔