’’کرنل جوزف کو سفارتی استثنا حاصل تھا، امریکہ نے کارروائی کی یقین دہانی کرائی‘‘


اسلام آباد (24 نیوز) دفترخارجہ کے ترجمان ڈاکٹر محمد فیصل نے کہا ہے کہ پاکستان کو امریکی سفارت خانہ یروشلم منتقل کرنے پر شدید تحفظات ہیں۔ ایران پر یک طرفہ امریکی پابندیوں کی مخالفت کرتے ہیں۔ امریکہ اتاشی کو سفارتی استثنا حاصل تھا۔

ڈاکٹر محمد فیصل کا کہنا تھا کہ پاکستان اسرائیلی سکیورٹی فورسز کے ہاتھوں فلسطینیوں کے قتل عام کی مذمت کرتا ہے۔ امریکی سفارت خانہ یروشلم منتقل کرنے پر پاکستان کو شدید تحفظات ہیں۔

یہ بھی پڑھیں: ریمینڈ ڈیوس کے بعد کرنل جوزف کو بھی بھاگنے کا راستہ دے دیا گیا 

ترجمان دفتر خارجہ نے کہا کہ رواں برس بھارت ایل او سی اور ورکنگ باؤنڈی پر ایک ہزار بار سیز فائر معاہدہ کی خلاف ورزی کر چکا ہے۔ پندرہ مئی کو تتہ پانی سیکٹر میں بھارتی بلا اشتعال فائرنگ سے ایک شہری شہید ہوا۔

انھوں نے بتایا کہ امریکہ میں پاکستانی سفارت کاروں پر سفری پابندیوں کے جواب میں پاکستان نے امریکہ سفارت کاروں پر جوابی پابندیاں لگائی ہیں۔ امریکہ سفارت کاروں سے مواصلاتی آلات کی تنصیب، سفارتی نمبر پلیٹس اور گاڑیوں کے کالے شیشوں کی سہولیات واپس لے لی گئی ہیں۔

پڑھنا نہ بھولیں: ہندو بنیا کی پھر شرار ت، ورکنگ باﺅنڈری پر بلااشتعال فائرنگ، دو شہری زخمی 

کرنل جوزف کے حوالے سے واضح کیا کہ امریکی اتاشی کو سفارتی استثنا حاصل تھا۔ امریکہ کی جانب سے سفارتی اہلکار کے خلاف کارروائی کی یقین دہانی کرائی گئی ہے۔

ان کا کہنا تھا کہ پاکستان ایران پر امریکہ کی پابندیوں سمیت مقبوضہ کشمیر میں بھارتی مظالم اور حریت قیادت کی غیر قانونی حراست کی مذمت کرتا ہے۔

واضح رہے کہ ایل او سی اور ورکنگ باؤنڈری پر جارحیت کے خلاف بھارتی ڈپٹی ہائی کمشنر کو دفترخارجہ طلب بھی کیا گیا۔