اسلام آباد ہائیکورٹ کا تحریک لبیک کا دھرنا کل تک ختم کرانے کا حکم

اسلام آباد ہائیکورٹ کا تحریک لبیک کا دھرنا کل تک ختم کرانے کا حکم


(24 نیوز): اسلام آباد ہائیکورٹ نے ضلعی انتظامیہ کو فیض آباد انٹرچینج پر جاری تحریک لبیک کا دھرنا کل تک ختم کرانے کا حکم دے دیا۔

 

تفصیلات کے مطابق اسلام آباد ہائیکورٹ کے جج جسٹس شوکت عزیز صدیقی نے شہری عبدالقیوم کی دائر درخواست پر فیصلہ سناتے ہوئے حکم جاری کیا کہ ضلعی انتظامیہ پرامن طریقہ سے یا طاقت کا استعمال  کرکے جیسے بھی ہو مظاہرین سے کل صبح 10 بجے تک فیض آباد انٹرچینج خالی کرائے۔

جسٹس شوکت صدیقی نے ریمارکس دیئےکہ ضلعی انتظامیہ اپنے اختیارات کے استعمال میں ناکام رہی ہے، مذہبی جماعتوں کے دھرنے سے شہری شدید مشکلات کا شکار ہیں۔

 

ڈی سی اسلام آباد نے عدالت کو بتایا کہ دھرنے میں شریک افراد نے پتھر جمع کیے ہوئے ہیں، اسپیشل برانچ کی رپورٹ کے مطابق مظاہرین کے پاس 10 سے 12 ہتھیار بھی ہیں، دھرنے میں 1800سے 2 ہزار کے قریب افراد موجود ہیں۔

 

عدالتی احکامات پر پولیس اور ضلعی انتظامیہ آپریشن کیلئے سرجوڑ کر بیٹھ گئی ہے، فیصلہ کیا گیاکہ شرکاء کو آج رات 10 بجے تک کا وقت دیا جائے گا، ورنہ کل صبح آپریشن شروع کر دیا جائے گا۔

 

واضح رہے کہ گزشتہ روز اسلام آباد ہائیکورٹ نے مذہبی جماعتوں کو دھرنا ختم کرنے کا حکم دیا تھا لیکن اسے کے باوجود تحریک لیبک کا دھرنا جاری ہے۔