قومی اسمبلی اجلاس میں وزراء کی غیر حاضری پر اپوزیشن برہم


(24 نیوز): قومی اسمبلی کے اجلاس میں وفاقی وزراء اور حکومتی ارکان کی غیر حاضری پر اپوزیشن جماعتوں نے شدید برہمی کا اظہار کرتے ہوئے اجلاس سے واک آؤٹ کر دیا۔ جاتے جاتے شیریں مزاری نے کورم کی نشاندہی بھی کر ڈالی۔

اسپیک رایاز صادق کی زیر صدارت قومی اسمبلی اجلاس میں پیپلزپارٹی نے کوٹے میں 36 فیصد پانی کی کمی پر توجہ دلاؤ نوٹس پیش کیا، کوئی وزیر موجود نہ ہونے پر پیپلز پارٹی کے ارکان ناراض نظر آئے۔

حکومتی رویے پر شیریں مزاری بھی خوب برہم ہوئیں۔ کہتی ہیں کہ ایوان کا مذاق بنا دیا گیا۔ شیریں مزاریکی جانب سے کورم پورا نہ ہونے کی نشاندہی پر اپوزیشن جماعتوں نے ایوان سے واک آؤٹ کر دیا، سردار ایاز صادق نے اجلاس پیر تک ملتوی کر دیا۔ 

اجلاس میں ایمبیسی روڈ پر درختوں کی کٹائی پر اراکین نے اظہار تشویش کیا، نعیمہ کشور کا کہنا تھا کہ درختوں کی کٹائی سنگین جرم ہے۔ 

معذور افراد کے سرکاری اداروں میں کوٹے سے متعلق طاہرہ اورنگزیب کا کہنا تھا کہ دفاتر میں معذور افراد کی وہیل چیئر ہی نہیں پہنچ سکیں۔ اجلاس پیر تک ملتوی کر دیا گیا۔