سینٹ اجلاس میں انتخابی اصلاحات ترمیمی بل 2017ء منظور کر لیا گیا


اسلام آباد  (24نیوز):سینٹ اجلاس میں انتخابی اصلاحات کے حوالے سے ترمیمی بل 2017ء پیش کیا  گیا،جس کی منظوری سینٹ میں دے دی گئی۔ وزیر قانون زاہد حامد  کہتے ہیں کہ بل میں کچھ خفیہ نہیں تھا۔ مجھ پر بدنیتی کا  الزام  لگایا   گیا۔

سینٹ اجلاس میں انتخابات ایکٹ 2017 میں مذید ترمیم کا بل وزیر قانون زاہد حامد نے پیش کیا ، قومی اسمبلی نے بل گزشتہ روزمنظور کیا تھا،آج سینٹ میں بھی بل منظور ہو  گیا۔وزیرقانون زاہد حامد کا کہنا تھا کہ بل میں کوئی بدنیتی شامل نہیں تھی۔ بل میں پہلے بھی احمدی،قادیانی اور لاہوری گروپ کوغیرمسلم قرار دے چکے ہیں۔

اعتزازاحسن بولے کہ الزام لگانے کا سلسلہ کہاں رکے گا؟ قانون کے غلط استعمال کو کیسے روکا جائے گا؟ اگر کوئی کسی پر شک کرے گا تو اسے 15 روز میں ایمان کا سرٹیفکیٹ دینا ہوگا۔اعتزازاحسن کا کہنا تھا کہ ہم بندگی پرفخر کرتے ہیں یہ بندگی ہمارا ایمان ہے۔