سہون میں حضرت لعل شہباز قلندرکی درگاہ پر دھماکے کامرکزی ملزم گرفتار


  کراچی (24نیوز):سہون میں حضرت لعل شہباز قلندر کی درگاہ پر دھماکہ کرنے والا مرکزی ملزم نادر  جاکھرانی گرفتار کر لیا  گیا۔ ملزم نے کئی راز بھی اگل دیئے، عدالت نے ملزم کو پانچ روزہ ریمانڈ پر سی ٹی ڈی کے حوالے کر دیا۔

سہون میں حضرت لعل شہباز کے مزار پر دھماکے میں ملوث مرکزی نادر جکھرانی منگھو پیر کے علاقے مائی گاڈی کے علاقے سے گرفتار کر لیا گیا۔ملزم نادر جکھرانی نے دھماکے میں غلام مصطفیٰ ، صفی اللہ اور حملہ آور برار بروہی کے ملوث ہونے کا اعتراف بھی کر لیا۔

بلوچستان کے ضلع نصیر آباد سے تعلق رکھنے والے ملزم نادر جکھرانی دھماکے سے ایک روز قبل 15 فروری کو درگاہ کی کروائی، جبکہ دھماکے کی منصوبہ بندی مصطفیٰ عرف ڈاکٹر نے کی، جو مستونگ میں سیکورٹی فورسز کے آپریشن میں مارا جا چکا ہے۔16 فروری کی شام ساڑھے 6بجے کے بعد درگاہ کی لائٹ بند ہونے کے بعد خود کش حملہ آور برار بروہی نے دھما کا کیا، دھماکے بعد نادر جکھرانی سہون بس اسٹاپ سے فرار ہو گیا۔ نادر جکھرانی میں کوئٹہ میں مکان بھی کرائے پر لے رکھا تھا، دوسری جانب انسداد دہشت گردی نے ملزم نادر جکھرانی کو 5 روزہ ریمانڈ پر سی ٹی ڈی کے حوالے کر دیا۔