ہائیکورٹ کا حکم آنے کے بعد حکومت فوری دھرنہ ختم کرائے:سینیٹر رحمان ملک

ہائیکورٹ کا حکم آنے کے بعد حکومت فوری دھرنہ ختم کرائے:سینیٹر رحمان ملک


 اسلام آباد(24نیوز): سینیٹر رحمان ملک کا کہنا ہے کہ یہ انتظامیہ کی نااہلی ہے کہ 15 دنوں سے اسلام آباد و راولپنڈی کو یرغمال بنایا گیا ہے۔ ہائیکورٹ کا حکم آنے کے بعد حکومت فوری دھرنہ ختم کرائے، وزیر مملکت اطلاعات طلال چوہدری نے کہا ہے کہ مظاہرین کو ہائیکورٹ کا حکم اور انتظامی حکم بھجوا دیا گیا ہے اور قانون کی خلاف ورزی پر پچاس مظاہرین کو گرفتار بھی کیا گیا ہے

سینیٹر رحمان ملک کی زیر صدارت سینیٹ کی قائمہ کمیٹی برائے داخلہ کا اجلاس ہوا، اسلام آباد میں مذہبی جماعت کے دھرنے بارے چیف کمشنر ذوالفقار حیدر نے کمیٹی کو بریفنگ میں بتایا کہ ہم نے تحریک لبیک کے رہنماوں سے مذاکرات کئے مگر مظاہرین کی ہٹ دھرمی کی وجہ سے مذاکرات کامیاب نہ ہو سکے۔ کمیٹی چیئر مین رحمان نے کہا کہ کمیٹی کی طرف سے مظاہرین کو ہدایت دیتے ہیں کہ وہ دھرنے کی جگہ چھوڑ دیں، ہماری انتظامیہ کو بھی ہدایت ہے کہ مظاہرین سے مذاکرات کریں اور انہیں قائل کرکے دھرنہ ختم کراویا جائے۔

وزیر مملکت برائے داخلہ طلال چوہدری نے کمیٹی میں بتایا کہ اسلام آباد میں دھرنے کی روایت قائم کی گئی ہے، مظاہرین بارہ مطالبات لے کر آئے تھے جن میں سے گیارہ نکات پر بات طے ہوئی تھی، مظاہرین کے رہنماؤں نے حکومت کو دھوکہ دیا اور ہم نے دھوکہ کھایا، مظاہرین کے رہنماؤں نے کہا تھا کہ وہ دعا کر کے وآپس آجائیں گے، مظاہرین کو اسلام آباد ہائیکورٹ کا حکم اور انتظامی حکم بھجوا دیا گیا ہے اور کل تک دھرنہ ختم کرنے کا کہہ دیا گیا ہے۔