شریف خاندان کے کیےجانیوالے بے جا سرکاری اخراجات پر ایکشن

شریف خاندان کے کیےجانیوالے بے جا سرکاری اخراجات پر ایکشن


اسلام آباد(24نیوز) حکومت نے شہباز شریف کے سفری اخراجات، مریم نواز کی جانب سے وزیر اعظم کے جہاز کے استعمال، رائیونڈ کی سکیورٹی کے اخراجات اور نواز شریف کے دور میں دیے جانے والے تحائف کے معاملات نیب کو بھجوانے کا اعلان کردیا۔

وزیرا عظم عمران خان کے معاون خصوصی برائے احتساب شہزاد اکبر اور افتخار درانی نے مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ گزشتہ دور میں وزیراعظم کے جہاز کا غیر قانونی استعمال ہوا، ہوائی سفر پر 340 ملین روپے غیر قانونی طور پر خرچ کیے گئے۔ 

بیرسٹر شہزاد اکبر نے بتایا کہ شہباز شریف نے سرکاری وسائل کا بے دریغ استعمال کیا ۔ انہوں نے سفرکی مد میں 60 کروڑ روپے خرچ کیے، رائیونڈ میں سکیورٹی کے نام پر دیوار بنوانے اور مریم نواز کے وزیر اعظم کا سرکاری جہاز استعمال کرنے کا معاملہ بھی نیب کو بھجوا رہے ہیں۔ نواز شریف دور میں گفٹ اینڈ انٹرٹینمنٹ کی مد میں بھی بھاری رقم خرچ کی گئی اور یہ معاملہ بھی نیب کو بھجوا رہے ہیں۔

شہزاد اکبر نے بتایا کہ ایک مقامی چینل نے شریف خاندان کی لندن میں ایک اور جائیداد کی نشاندہی کی ہے۔ سنٹرل لندن کی پراپرٹی جس کی قیمت 2 اعشاریہ 3 ملین پاﺅنڈ ہے۔ یہ فلیٹ کلثوم نواز کے نام پر تھااور کبھی ڈیکلیئر نہیں کیا گیا۔

وزیراعظم کے معاون خصوصی افتخار درانی کا پریس کانفرنس میں کہنا تھا کہ وزیراعظم کی کفایت شعاری مہم کے باعث وزیراعظم ہاؤس کا خرچہ 43 کروڑ روپے سے کم کر کے 27 کروڑ روپے ہو گیا ہے۔

سٹاف ممبر، یونیورسٹی آف لاہور سے جرنلزم میں گریجوایٹ، صحافی اور لکھاری ہیں۔۔۔۔